ابو عاصم بن نبیل

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

ابو عاصم النبیل: امام ابو حنیفہ کے تلامذۂ محدثین میں سے ہیں۔

ولادت[ترمیم]

ابو عاصم نبیل کی ولادت 206ھ 822ء میں بصرہ میں ہوئی۔

نام[ترمیم]

انکا نام احمد بن عمرو بن ابو عاصم الضحاك ابن مخلد الشَّيْبَانی، ابو بكر بن ابو عاصم اور لقب نبیل ہے۔ مشہور محدث ہیں۔

قاضی[ترمیم]

ابو عاصم نبیل اصفہان کے 269ھ سے 282ء تک قاضی رہے۔

زہد وتقوی[ترمیم]

صحیح بخاری و مسلم وغیرہ میں ان کی روایت سے بہت سی حدیثیں مروی ہیں۔ علامہ ذہبی نے میزان الاعتدال میں لکھا ہے کہ ان کی توثیق پر تمام لوگوں کا اتفاق ہے۔ نہایت پارسا اور متورع انسان تھے۔ امام بخاری نے روایت کی ہے کہ ابو عاصم نے خود کہا کہ "جب سے مجھے معلوم ہوا کہ غیبت حرام ہے میں نے آج تک کسی کی غیبت نہیں کی۔

یہ امام ابو حنیفہ کے مختص شاگردوں میں تھے۔ خطیب بغدادی نے اپنی تاریخ میں لکھا ہے کہ ایک دفعہ کسی نے ان سے پوچھا کہ سفیان ثوری زیادہ فقیہ ہیں یا ابو حنیفہ؟ بولے کہ "موازنہ تو ان چیزوں میں ہو تا ہے جو ایک دوسری سے ملتی جلتی ہوں۔ امام ابو حنیفہ نے فقہ کی بنیاد ڈالی ہے اور سفیان ثوری صرف فقیہ ہیں۔

وفات[ترمیم]

ابو عاصم کی287ھ 900ء میں وفات ہوئی۔[1] [2]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. البدايہ والنہایہ مؤلف: عماد الدين ابو الفداء اسماعيل بن عمر بن كثير القرشی الدمشقی
  2. الاعلام خیر الدین زرکلی