اسٹیفن ہارپر

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
اسٹیفن ہارپر
تفصیل= 2007، G8 سربراہی

کینیڈا کا وزیراعظم 22واں
آغاز منصب
6 فروری 2006ء
بادشاہ الزبتھ دوم
Fleche-defaut-droite-gris-32.png پال مارٹن
  Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
آغاز منصب
28 جون 2002ء
Fleche-defaut-droite-gris-32.png پریسٹن ماننگ
  Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
مدت منصب
19931997
معلومات شخصیت
پیدائشی نام (انگریزی میں: Stephen Joseph Harper خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں پیدائشی نام (P1477) ویکی ڈیٹا پر
پیدائش 30 اپریل 1959 (59 سال)[1]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ پیدائش (P569) ویکی ڈیٹا پر
ٹورانٹو[2][3]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام پیدائش (P19) ویکی ڈیٹا پر
رہائش 24 سسکس ڈرائیو, اوٹاوا, انٹاریو
شہریت Flag of Canada (Pantone).svg کینیڈا  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں شہریت (P27) ویکی ڈیٹا پر
مذہب اناجیلی (مسیحی)
اولاد بنحمن اور ریچل
عملی زندگی
پیشہ سیاست دان،  ماہر معاشیات  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں پیشہ (P106) ویکی ڈیٹا پر
مادری زبان انگریزی  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مادری زبان (P103) ویکی ڈیٹا پر
پیشہ ورانہ زبان فرانسیسی،  انگریزی[4]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں زبانیں (P1412) ویکی ڈیٹا پر
دستخط
اسٹیفن ہارپر
ویب سائٹ
IMDb logo.svg
IMDB پر صفحہ  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں آئی ایم ڈی بی - آئی ڈی (P345) ویکی ڈیٹا پر

سٹیفن ہارپر (stephen harper) کینیڈا کا بائیسواں وزیر اعظم ہے اور قدامت پسند جماعت کا راہنما ہے۔ 2006ء کے مرکزی انتخابات میں اس کی جماعت کی کامیابی کے بعد وہ وزیر اعظم کی کرسی پر بیٹھا۔ دو قدامت پسند جماعتوں، ترقی پسند قدامت پسند اور کینیڈائی اتحاد، کے مغلوبہ کے بعد بننے والی قدامت پسند جماعت سے تعلق رکھنے والا وہ پہلا وزیر اعظم ہے۔

ہارپر اپنے قدامت نظریات کے لیے مشہور ہے۔[5]

پارلیمان بند کرو[ترمیم]

دسمبر 2008ء میں اپنے خلاف تحریک عدم اعتماد کو سبوتاژ کرنے کی خاطر ہارپر نے گورنر جنرل میخائل یان سے کہہ کر پارلیمان 26 جنوری 2009ء تک بند کرا دی۔[6] پھر اگلے سال دسمبر 2009ء میں جب پارلیمانی شورٰی افغان شہریوں پر تشدد کی تحقیقات کر رہی تھی، ہارپر نے 3 مارچ 2010ء تک پارلیمان پر تالا ڈلوا دیا۔[7] اس کے علاوہ 2009ء میں تین پہرے دار اداروں کا منہ بھی بند کر دیا۔[8] اپنا فرض ادا کرنے پر 2008ء میں جوہری پہرے دار کو بھی ملازمت سے برخواست کر دیا۔[9]

توہین پارلیمان[ترمیم]

25 مارچ 2011ء کو ہارپر حکومت کو توہین پارلیمان کا مرتکب قرار دیتے ہوئے قرارداد کے ذریعہ ہارپر حکومت گرا دی گئی۔[10]

انتخابات 2011[ترمیم]

انتخابی مہم میں طعبیت کی تظبیط پسندی واضح رہی۔[11] کینڈائی قوم نے 2011 انتخابات میں ہارپر کی جماعت کو واضح اکثریت عطا کی۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ایس این اے سی آرک آئی ڈی: http://snaccooperative.org/ark:/99166/w6rc0wr2 — بنام: Stephen Harper — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  2. http://www.britannica.com/EBchecked/topic/1005410/Stephen-Harper
  3. http://www.bbc.com/news/world-us-canada-13217949
  4. http://data.bnf.fr/ark:/12148/cb15601991r — اخذ شدہ بتاریخ: 10 اکتوبر 2015 — اجازت نامہ: آزاد اجازت نامہ
  5. ٹورانٹو سٹار، 29 اگست 2009ء، "Walkom: Harper speaking to Canada's dark side?"
  6. "Canadian Leader Shuts Parliament"۔ نیو یارک ٹائمز۔ 4 دسمبر 2008ء۔ 
  7. "Canada’s Conservatives shut down parliament, again"۔ عالمی اشتراکی موقع جال۔ 31 دسمبر 2009ء۔ 
  8. "Travers: This holiday, pity the poor watchdog"۔ ٹورانٹو سٹار۔ 24 دسمبر 2009ء۔ 
  9. "Nuclear safety watchdog head fired for 'lack of leadership': minister"۔ CBC۔ 16 جنوری 2008ء۔ 
  10. "Walkom: Yes, contempt of Parliament does matter"۔ دی ٹورانٹو سٹار۔ اخذ کردہ بتاریخ 27 March 2011۔ 
  11. "RCMP admits it overstepped bounds by ejecting people from Tory events"۔ گلوب اور میل۔ اصل سے جمع شدہ 10 April 2011 کو۔ اخذ کردہ بتاریخ 6 April 2011۔