بعثت

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

بعثت سے مراد جبرائیل کی حضور صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم کے سامنے قراآن کی پہلی نازل ہونے والی آیت کا تلاوت کرنا ہے۔ آپ صلی اللہ علیہ وسلم کی عمر جب چالیس برس ہوچکی تھی اس وقت جبرئیل علیہ السلام سب سے پہلی وحی لیکر نازل ہوئے۔ اور یہی سن کمال ہے اور کہا جاتا ہے کہ یہی پیغمبروں کی بعثت کی عمر ہے۔ دلائل و قرآن پر ایک جامع نگاہ ڈال کر جبرائیل علیہ السلام کی تشریف آوری کے واقعے کی تاریخ متعین کی جا سکتی ہے۔ تحقیق کے مطابق یہ واقعہ رمضان المبارک کی 21 تاریخ کو دوشنبہ کی رات میں پیش آیا۔ اس روز اگست کی 10 تا ریخ تھی اور سن 610 ء تھا۔ قمری حساب سے نبی صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم کی عمر چالیس سال چھ مہینے بارہ دن اور شمشی حساب سے 39 سال 3 مہینے 22 دن تھی۔[1]

سب سے پہلی وحی[ترمیم]

جبرئیل علیہ السلام آپ صلی اللہ علیہ وسلم پر سب سے پہلی وحی سورہ اقرء کے شروع کی پانچ آیت لیکر نازل ہوئے۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. الرحیق المختوم از مولانا صفی الرحمن مبارکپوری