بنو خزاعہ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

قحطانی عربوں کا ایک مشہور قبیلہ جو قدیم زمانے میں یمن میں آباد تھا۔ نبی کریم صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم کی ولادت سے بہت پہلے ان لوگوں نے جنوبی حجاز اور مکہ پرقبضہ کر لیا اور بنی جرہم کو حجاز سے بے دخل کر دیا جو پرانے وقتوں سے یہاں کے بااختیار آزاد باشندے تھے۔ حضور کے جد اعلیٰ قُصی نے بنو خزاعہ کو مکے سے نکال کر اپنا اقتدار قائم کر لیا۔ مکے سے نکل کر یہ قبیلہ جدہ کے قریب آباد ہو گیا۔ ظہور اسلام کے بعد، صلح حدیبیہ کی رو سے، یہ لوگ مسلمانوں کے حلیف بن گئے۔ 8 ہجری میں بنو بکر اور قریش نے ان پر حملہ کر دیا تو ان کاایک وفد مدینہ منورہ دربار رسالت میں حاضر ہو کر طالب امداد ہوا۔ معاہدے کی بنا پر نبی کریم ان کی مدد کے پابند تھے۔ اس لیے آپ نے دس ہزار صحابہ کے ساتھ مل کر مکہ پر چڑھائی کی، جس کے نتیجے میں مکہ فتح ہو گیا۔ اس طرح یہ قبیلہ فتح مکہ کا سبب بنا۔