بی-2 سپرٹ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں
بی-2 سپرٹ
B2 spirit !.jpg
عمومی معلومات
قسم بمبار ہوائی جہاز
بنانے والی کمپنی نارتھراپ گرومن
استعمال کرنے والے ممالک امریکہ
حالت فضائیہ میں شامل
قیمت 2.2 بلین ڈالر

بی-2 سپرٹ (B-2 Spirit) ایک دزدیدہ یا سٹیلتھ بمبار ہوائی جہاز ہے۔ یہ عام بموں کے ساتھ ساتھ ایٹم بم بھی لے جا سکتا ہے۔ اسے امریکہ کی کمپنی نارتھراپ گرومن نے بنایا ہے۔ یہ دنیا کا مہنگا ترین جہاز ہے۔ اس میں جو سٹیلتھ تکنیک استعمال کی گئی ہے وہ اسے ریڈار کی نظروں سے محفوظ رکھتی ہے جس کی وجہ سے یہ دشمن کے سب سے محفوظ علاقوں میں بھی بمباری کر سکتا ہے۔

خصوصیات[ترمیم]

بی-2 بمبار جہاز میں کوئی ریڈار نہیں ہوتا جس کی وجہ سے یہ ریڈار ڈیٹکٹرز سے پوشیدہ رہتا ہے۔ یہ جہاز اپنی رہنمائی کے لیۓ جی پی ایس (GPS) کا نظام استعمال کرتا ہے۔ اسکا ڈیزائن اور اسکا انجن اسے کم بلندی پر ہر قسم کہ موڑ اور مشن انجام دینے کی صلاحیت فراہم کرتا ہے۔ یہ ہوا ہی میں کسی دوسرے ہوائی جہاز سے اپنا ایندھن بھی بھروا سکتا ہے۔ یہ قریبا 11000 کلومیٹر دور تک بغیر ایندھن بھرواۓ اڑ سکتا ہے۔

یہ 80 جے ڈی اے ایم (JDAM) بم لے کر 80 نشانوں کو تباہ کر سکتا ہے۔ اسکے اندر ایک بہت ہی اعلی (GATS) سسٹم نصب ہے جو اسکے جے ڈی اے ایم (JDAM) بموں کے نشانوں کی درستی کی ضامن ہے۔

اس جہاز میں دو پائلٹ بیٹھتے ہیں۔

تاریخ[ترمیم]

بی-2 کو بنانے کا کام قریبا 1980میں شروع ہوا اور اس پر 23 بلین امریکی ڈالر خرچ ہۓ۔ 22 نومبر 1988 کو اس جہاز کو پلانٹ 42 پلام ڈیل، کیلی فورنیا میں عوام کے سامنے لایا گیا۔ اس کو پہلے مسوری امریکہ میں بنایا جاتا تھا لیکن آج کل یہ بحر ہند میں برطانیہ کے جزیرے ڈیگو گارشیا میں امریکہ اور برطانیہ دونوں ممالک مل کر بنا رہے ہیں۔

جنگ میں شمولیت[ترمیم]

اگرچہ اتنے مہنگے جہاز کو جنگ میں استعمال کرنا ایک بہت رسک ہے لیکن یہ جہاز اپنی صلاحیت کی وجہ سے کئی بار جنگ میں استعمال ہوا ہے۔

  • کوسوو کی جنگ (1999)۔
  • امریکہ / افغان جنگ (2001)۔
  • امریکہ / عراق جنگ (2003)۔

عام معلومات[ترمیم]

بی-2 سپرٹ کا خاکہ۔

پیمائش[ترمیم]

کارکردگی[ترمیم]

اسلحہ[ترمیم]

  • 80 جی ڈی اے ایم بم (ایک بم کا وزن:کلوگرام 225)۔
  • 36 سی بی یو بم (335 کلوگرام:ایک بم کا وزن)۔
  • 16 بی-61 یا بی-82 ایٹم بم۔

بیرونی روابط[ترمیم]