جنگ بعاث

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

جنگ بعاث مدینہ منورہ کے قبیلہ اوس و خزرج کے درمیان طویل جنگ ہے
بعاث مدینہ منورہ کے قریب بنی قریظہ کے علاقہ میں ایک جگہ تھی جہاں انصار کے دوقبیلوں اوس اور خزرج میں بڑی خون ریزجنگ ہوئی تھی جس کی عداوت ایک سو بیس سال تک رہی تھی،پھرحضور انورصلی اللہ علیہ وسلم نے ان دونوں قبیلوں کو ملا کر شیروشکرکردیا
آخری لڑائی جو تاریخ عرب میں جنگ بعاث کے نام سے مشہور ہے اس قدر ہولناک اور خونریز ہوئی کہ اس لڑائی میں اوس و خزرج کے بڑے بڑے سردار اور نامور بہادر آپس میں لڑ لڑ کر قتل ہو چکے تھے
جنگ بعاث دراصل اوس اور خزرج کی جنگ تھی، یہود اس میں فریقین کی جانب سے شریک ہو گئے اور نمایاں حصہ لیا بنو نضیر اور بنو قریظہ نے اوس کا ساتھ دیا اور بنو قینقاع خزرج کی حمایت میں نکل پڑے جنگ نے طول کھینچا گھمسان کا رن پڑا بالآخر شکست خزرج کے فریق کو ہوئی۔[1]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ۔الروض الانف ،ج2،ص348