جھیل ناصر

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
جھیل ناصر
Lake Nasser Vista.jpg
ابو سمبل سے نظارہ
Egypt-region-map-cities-oases.gif
جھیل کے وقوع کا نقشہ
جغرافیائی متناسق22°25′N 31°45′E / 22.417°N 31.750°E / 22.417; 31.750متناسقات: 22°25′N 31°45′E / 22.417°N 31.750°E / 22.417; 31.750
قسم جھیلذخیرہ
بنیادی اضافہ
بنیادی کمی
نکاسی طاس ممالکمصر، سوڈان
زیادہ سے زیادہ. لمبائی550 کلومیٹر (340 میل)
زیادہ سے زیادہ. چوڑائی35 کلومیٹر (22 میل)
رقبہ سطح5,250 کلومیٹر2 (2,030 مربع میل)
اوسط گہرائی25.2 میٹر (83 فٹ)
زیادہ سے زیادہ. گہرائی180 میٹر (590 فٹ)
پانی کا حجم132 کلومیٹر3 (32 cu mi)[1]
ساحل کی لمبائی17,844 کلومیٹر (25,735,000 فٹ)
سطح بلندی183 میٹر (600 فٹ)
1 Shore length is not a well-defined measure.
مصر کے نقشے میں جھیل ناصر نمایاں ہے

جھیل ناصر (عربی: بحيرۃ ناصر) جنوبی مصر اور شمالی سوڈان کا ایک عظیم آبی ذخیرہ ہے۔ اس کا 83 فیصد حصہ مصر میں ہے جہاں اسے جھیل ناصر کہا جاتا ہے جبکہ سوڈان میں اسے جھیل نوبیا کے نام سے پکارا جاتا ہے۔

یہ جھیل 1958ء سے 1970ء کے دوران دریائے نیل پر تعمیر کیے جانے والے اسوان بند کے نتیجے میں بنی۔

جھیل ناصر 550 کلومیٹر طویل اور خط سرطان کے قریب زیادہ سے زیادہ 35 کلومیٹر عریض ہے۔ اس کا کل سطحی رقبہ 5،250 مربع کلومیٹر اور پانی کے ذخیرے کی گنجائش 157 مکعب کلومیٹر ہے۔

1960ء کی دہائی میں بند کی تعمیر کے دوران ارد گرد کے کئی علاقوں سے افراد کو منتقل کر دیا گیا جبکہ سوڈان کی دریائی بندرگاہ وادی حلفا مکمل طور پر زیر آب آگئی اور نیا شہر اسیجھیل کے کنارے بسایا گیا۔

یہ جھیل سابق مصری صدر جمال عبدالناصر کے نام سے موسوم ہے جو اس متنازع بند کے منصوبے کے خالق تھے۔

1990ء کی دہائی میں جھیل میں ذخیرہ آب حد سے زیادہ بڑھنے کے بعد پانی مغربی صحرا کی جانب سفر کرنے لگا جس سے 1998ء کے اوائل میں توشکہ جھیلیں تشکیل پائیں۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "Lake Nasser". World Lake Database. 25 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 15 اکتوبر 2016.