سکتہ (رموز اوقاف)

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

سکتہ یا وقفِ خفیف(،) رموز اوقاف کا حصہ ہے۔ یہ نامکمل فقرے میں ایک عارضی توقف ہے۔ یہ حسب ذیل صورتوں میں مستعمل ہے:

  • کسی جملے میں شامل سلسلہ وار عناصر میں فرق لانا:
  • کسی فقرے کے دو آزادانہ حصوں کو جوڑنے کے لیے:
    • اس نے شروع میں اچھا کام کیا، بعد میں اس نے میں غفلت برتی۔
  • ان چھوٹے چھوٹے جملوں کے درمیان اس کا استعمال ہوتا ہے جن سے مل کر ایک بڑا جملہ بنتا ہے اورایک بات مکمل ہوجاتی ہے۔
  • کسی تعارفی پہلو کو آگے لانے کے لیے:
    • جب وہ اس خالی کمرے میں داخل ہوا، وہاں اس نے شکیلہ کو دیکھا۔
  • کسی شے کے متعلق مزید معلومات فراہم کرنے کے لیے:
    • یہ باغ جو آپ دیکھ رہے ہیں، سو سال پرانا ہے۔
  • کئی اسمائے صفت اور متعلقہ الفاظ میں فرق لانے کے لیے:
    • ایک ایسی لڑکی جو نمازی ہو، پرہیزگار ہو، امورِ خانہ داری سے واقف ہو، شادی کے رشتے کے لیے مطلوب ہے۔
  • چلتی گفتگو کو لکھنے کے لیے:
    • "مجھے انڈے خریدنا ہے،" اس نے نرمی سے کہا "آپ کتنے میں دوگے۔"

حوالہ جات[ترمیم]