شیر شاہ اعوان

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

شیر شاہ اعوان۔ وی سی (14 فروری 1917 - 20 جنوری 1945) ایک برطانوی ہندوستانی فوج کا سپاہی تھا جس نے وکٹوریہ کراس حاصل کیا جو کہ دشمن کے مقابلہ میں بہادری کا سب سے بڑا اور معزز ایوارڈ ہے جو برطانوی اور دولت مشترکہ افواج کو دیا جا سکتا تھا۔

صرف تین پاکستانیوں کو یہ اعزاز دیا گیا

جنوری 1945 کو کائیبین ، کالدان ، برما (اب میانمار) میں ، لانس نائیک شیر شاہ اپنی پلٹن کے بائیں آگے والے حصے کی کمان کر رہے تھے جب اس پر جاپانیوں کی بھاری تعداد نے حملہ کیا۔ اس نے دشمن کے درمیان سیدھے رینگتے ہوئے اور پوائنٹ بلین رینج پر گولی چلوا کر دو حملے پسپا کیے۔ دوسرے حملے اسے چوٹ لگی اور اس کی ٹانگ ٹوٹ گئی ، لیکن اس نے مقابلہ جاری رکھا یہ کہتے ہوئے کہ اس کی چوٹ بہت معمولی ہے اور جب تیسرا حملہ ہوا تو وہ دوبارہ دشمن کی طرف آگے بڑھتا رہا یہاں تک کہ اسے سر پر گولی مار کر شہید کر دیا گیا۔

شیر شاہ کی بٹالین 7/16 پنجاب رجمنٹ ، جسے پیار سے "سات سولہ پنجاب" کے نام سے جانا جاتا ہے اب پاک فوج کا حصہ ہے ، جسے فخر کے ساتھ "شیر شاہ بٹالین" کے نام سے جانا جاتا ہے۔[1][2]

  1. "وکٹوریہ کراس". 
  2. شاہ اعوان وکٹوریہ کراس.php "شیر شاہ اعوان" تحقق من قيمة |url= (معاونت). [مردہ ربط]