فاخرہ یونس

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
فاخرہ یونس
معلومات شخصیت
پیدائش سنہ 1979  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پاکستان  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات 17 مارچ 2012 (32–33 سال)[1]  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
روم  ویکی ڈیٹا پر (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مدفن کراچی  ویکی ڈیٹا پر (P119) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
طرز وفات خود کشی  ویکی ڈیٹا پر (P1196) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of Pakistan.svg پاکستان  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
پیشہ رقاصہ  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان اردو  ویکی ڈیٹا پر (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

فاخرہ یونس ایک پاکستانی عورت ہے جس پر تیزاب پھینکا گیا تھا جس سے اس کا چہرہ خراب ہو گیا۔ بالآخر اس نے 33 سال کی عمر میں 17 مارچ 2012ء کو روم، اطالیہ میں خود کشی کر لی۔ فاخرہ ہیرا منڈی میں ایک رقاصہ تھی۔ وہاں اس کی ملاقات پنجاب کے سابق گورنر غلام مصطفے کھر کے بیٹے بلال کھر سے ہوئی۔ اس کے بعد ان دونوں نے شادی کر لی جو تین سال تک چلی۔ فاخرہ کے مطابق اس کے شوہر نے اس پر تیزاب پھینکا جس سے اس کا چہرہ خراب ہو گیا۔[2][3][4][5]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Fakhra Younus, Pakistani Acid Victim, Commits Suicide — اخذ شدہ بتاریخ: 12 اگست 2012
  2. "Fakhra Younus Dead: Pakistani Acid Victim Commits Suicide"، Sebastian Abbot, Huffington Post، مارچ 28 2012
  3. "Pakistani former dancing girl who was attacked with acid commits suicide"، Fox News, مارچ 28, 2012
  4. ""Prominent Pakistani Acid Victim Commits Suicide"، National Public Radio/The Associated Press, مارچ 28, 2012". 29 مارچ 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 29 مارچ 2012. 
  5. "Prominent Pakistani acid victim Fakhra Younus commits suicide"