للتھن ہاولا

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
للتھن ہاولا
Lal Thanhawla.jpg 

مناصب
وزیر اعلیٰ میزورم   خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں منصب (P39) ویکی ڈیٹا پر
دفتر میں
5 مئی 1974  – 20 اگست 1976 
Fleche-defaut-droite-gris-32.png ٹی سیلو 
لال ڈینگا  Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
وزیر اعلیٰ میزورم   خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں منصب (P39) ویکی ڈیٹا پر
دفتر میں
24 جنوری 1989  – 3 دسمبر 1998 
Fleche-defaut-droite-gris-32.png صدارتی راج 
زورام تھانگا  Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
وزیر اعلیٰ میزورم   خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں منصب (P39) ویکی ڈیٹا پر
آغاز منصب
11 دسمبر 2008 
Fleche-defaut-droite-gris-32.png زورام تھانگا 
  Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
معلومات شخصیت
پیدائش 19 مئی 1942 (77 سال)  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ پیدائش (P569) ویکی ڈیٹا پر
شہریت Flag of India.svg بھارت  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں شہریت (P27) ویکی ڈیٹا پر
جماعت انڈین نیشنل کانگریس  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں سیاسی جماعت کی رکنیت (P102) ویکی ڈیٹا پر
عملی زندگی
پیشہ سیاست دان  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں پیشہ (P106) ویکی ڈیٹا پر

للتھن ہاولا (پیدائش 19 مئی 1942ء) ایک بھارتی سیاست دان جو 11 دسمبر 2008ء سے ریاست میزورم کے وزیر اعلیٰ ہیں۔ اس سے قبل وہ سنہ 1984ء سے سنہ 1986ء تک اور سنہ 1989ء سے سنہ 1998ء تک وزیر اعلیٰ تھے۔ وہ ایک اور مرتبہ وزیر اعلیٰ 2013ء کے انتخابات جیتنے کے بعد بنے تھے۔ ان کو اس مرتبہ پانچویں وزارت اعلیٰ کا منصب ملا، جو میزورم میں ایک ریکارڈ ہے۔[1][2] ان کا تعلق سیاسی جماعت انڈین نیشنل کانگریس سے ہے۔ ان کے انتخابی حلقے سیرچپ اور ہرنگترزو ہیں۔ انہوں نے 1978ء، 1979ء، 1984ء، 1987ء، 1993ء، 2003ء، 2008ء اور 2013ء کے انتخابات لڑے اور ہر مرتبہ کامیابی نصیب ہوئی۔[3]

سال 2013ء کے میزورم اسمبلی انتخابات میں للتھن ہاولا کی صدارت میں کانگریس پارٹی کو چالیس رکنی قانون ساز اسمبلی میں سے چونتیس نشستیں ملیں، اس مرتبہ 2008ء کے انتخابات سے دو نشستیں زیادہ ملی تھیں۔ ان کی مخالف جماعت میزو نیشنل فرنٹ کو پانچ جبکہ میزورم پیپلز کانفرنس کو صرف ایک نشست نصیب ہوئی۔[1][4]

للتھن ہاولا کھیلوں اور رضاکارانہ کاموں میں بھی سرگرم ہے۔ وہ میزورم فٹ بال ایسوسی ایشن، میزورم اسپورٹس ایسوسی ایشن، میزورم ہاکی ایسوسی ایشن اور میزورم اولمپک ایسوسی ایشن کے بانی صدر تھے اور میزورم باکسنگ ایسوسی ایشن اور ایجل ایمیٹیور ایتھلیٹک کلب کے بانی سیکریٹری تھے۔ ساتھ ہی وہ انڈین اولمپک ایسوسی ایشن کے سابق صدر، نارتھ ایسٹ اولمپک کمیشن کے چیئرمین، میزورم جرنلسٹز ایسوسی ایشن کے بانی صدر بھی تھے۔ وہ میزو او (روزنامہ اخبار) اور رویمنا پالائی (انڈین نیشنل کانگریس کی روزنامہ خبر) کے بانی مدیر بھی تھے۔ وہ ینگ میزو ایسوسی ایشن کے بانی اور ایزول ڈریمیٹک اینڈ کلچرل سوسائٹی کے بانی سیکریٹری بھی تھے۔[3]

ابتدائی زندگی[ترمیم]

وہ ہمارتاؤں فونگا سیلو اور لال سوملیانی چونگتھو کے بیٹے ہیں۔ انہوں سنہ 1958ء میں میٹرک کیا۔ سنہ 1961ء میں انہوں نے آرٹس میں انٹر پاس کیا۔ اس کے بعد ایجل کالج (موجودہ پچوں گا یونیورسٹی کالج) سے بی اے کیا جو اس وقت گوہاٹی یونیورسٹی سے منسلک تھا۔ انہوں نے سنہ 1964 میں تعلیم مکمل کی۔[5]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب شوشانتا تالکدار (14 دسمبر 2013)۔ "Lal Thanhawla sworn in as Mizoram Chief Minister"۔ دی ہندو۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 12 جنوری 2014۔
  2. "Lal Thanhawla sworn in as Mizoram CM"۔ دی ٹائمز آف انڈیا۔ 14 دسمبر 2013۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 12 جنوری 2014۔
  3. ^ ا ب "About Government – Chief Minister: PU LALTHANHAWLA (11. December 2008 - )"۔ mizoram.nic.in۔ نیشنل انفارمیٹکس سینٹر، میزورم اسٹیٹ سینٹر۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 12 جنوری 2014۔
  4. "Mizoram CM's brother Lal Thanzara resigns as MoS over office of profit allegations"۔ 20 اگست 2015۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔
  5. "Pu Lal Thanhawla"۔ Chief Minister's Office۔ اخذ شدہ بتاریخ 12 جنوری 2014۔