مالیاتی ریاضی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
اصطلاح term

مالیاتی ریاضی

Financial mathematics

مالیاتی ریاضی ، اطلاقی ریاضیات کی ان شاخوں پر مشتمل ہے جن کا تعلق مالیاتی منڈیوں سے ہے۔

اس موضوع کا قریبی تعلق مالیاتی اقتصادیات کے ساتھ ہے، جو بہت سے زیریں نظریہ سے متعلق ہے۔ جامع طور پر، ریاضیاتی یا عددی تماثیل جو مالیاتی اقتصادیات سے سوجھتے ہیں کو ریاضیاتی اقتصادیات مشتق کرے گا اور وسعت دے گا۔ اسطرح جبکہ مالیاتی ماہر اقتصادیات یہ مطالعہ کرے کہ کسی کمپنی کی کوئی خاص حصص قیمت ہونے کی ساختی وجوہ کیا ہیں، ایک مالیاتی ریاضیدان حصص قیمت کو دی ہوئی مان کر تصادفی حسابان کے استعمال سے یہ جاننے کی کوشش کرے گا کہ حصص کے مشتق کی جائز قدر کتنی ہے (دیکھو اختیاریات کا مالیت

ممارست میں، ریاضیاتی اقتصادیات کا شمارندی اقتصادیات (جسے اقتصادی ہندسیہ بھی کہے ہیں) سے بھاری تراکب ہے۔ استدلالً ، یہ زیادہ تر مترادف ہی ہیں، اگرچہ اخیر از ذکر کا اطلاقیہ سے زیادہ تعلق ہے، جبکہ اول از ذکر تمثیل اور اشتقاق پر مرکوز کرتا ہے (دیکھو اقداری تحلیلگر

ریاضیاتی مالیات میں ہنڈی سے آزاد قیمت تعین کا بنیادی قضیہ ایک کلیدی قضیہ ہے۔

دنیا بھر میں بہت سی جامعات اب ریاضیاتی اقتصادیات میں تحقیقی اور سندی برنامج پیش کرتے ہیں؛ دیکھو اقداری مالیات میں آقا۔


مزید[ترمیم]