منجو قمر

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

منجو قمر ید اللہی (Manju Qamaraidullāhī (1908–1983ٰٰ ایک اردو ڈراما نگارتھے۔ وہ چن ناپٹنا، بھارت کی ریاست کرناٹک میں پیدا ہونے تھے۔ انہوں نے حیدرآباد، دکن میں اپنے کیریئر کو قائم کیا۔ انہوں نے سماجی اور تاریخی اہمیت کے اردو میں مختلف ڈرامے لکھے۔ ان کے ڈرامے میں سے زیادہ تر ویویدھ بھارتی، حیدرآباد، اے پی پی میں آرٹس پرفارمنگ کے مرکز میں پیش کیا گیا تھا۔ نظام کے دور حکومت کے دوران انہوں نے مختلف ڈرامے دکھائے۔ حیدرآباد دکن کے ساتویں نظام میر عثمان علی خان ان کے ڈرامے میں سے ایک مہمان کے طور پر شریک ہوئے۔ نظام کی طرف سے کلمات تحسین حاصل ہوئے۔[1] ان کے ڈرامے میں سے کچھ ان کے پرائم ٹائم اردو نمایاں نورنگ میں آل انڈیا ریڈیو حیدرآباد اسٹیشن سے نشر کیے گئے، ابتدائی ڈراما بہادر شاہ ظفر آل انڈیا ریڈیو، حیدرآباد کی طرف سے تین اقساط میں نشر کیا جائے سب سے پہلے اردو ڈراما بن گیا۔ منجو قمر کے یہ ڈرامے عوام میں بھی کافی مقبول ہوئے۔ کرداوں کے ساتھ انصاف، نزاکت و نفاست سے مکالمہ نگاری، سماعت کے لائق منظر کشی اور خوش ما تحریر کردہ اسکرپٹ منجو قمر کا خاصا رہا تھا، جسے وہ تاحیات بنائے رکھنے کی کوشش میں لگے ہوئے تھے۔

فلمی دنیا تک کی پینچ[ترمیم]

فلمی دنیا کے مشہور اداکار اور مغل اعظم کے اکبر اعظم پرتھوی راج کپور کے منجو قمر سے بہت اچھے دوستانہ تعلقات تھے۔ چنانچہ منجو قمر ہی کی سفارش پر پرتھوی راج کپور نے شنکر کو جئے کشن کے ساتھ فلمی دنیا میں متعارف کروایا تھا۔[2]

مجموعہ کلام[ترمیم]

منجو قمر کا اہم مجموعہ کلام رنگ و رباب 2005ء میں شائع ہوا تھا۔ یہ اشاعت منجو فمر ميموريل كميٹی کی جانب سے زیر عمل ہوئی ہے۔ اس کی حیدرآباد اور ملک کے اخبارات اور رسائل میں چرچا بھی ہوئی تھی۔ اسے 12 مئی 2008ء میں ڈیجی ٹائز بھی کیا گیا۔ مطبوعہ کتاب کے کل 228 صفحات ہیں۔ اسے ریاستہائے متحدہ کی یونیورسٹی آف میشیگن میں کیٹالاگ بھی کیا گیا ہے۔[3]

کتابیات[ترمیم]

  • Sayyid Mahmud Mahdi. Manju Qamar, Ek azim drama nigar. Nigah Publications, 1979.
  • Sayyid Mumtaz Mahdi. Manju Qamaraidullahi (منجو قمر، سيد ممتاز مهدى يدالهى), 2005.
  • Manju Qamaraidullāhī (منجو قمر); Sayyid Mumtāz Mahdī. Rang o rabāb : majmūʻah-yi kalām (رنگ و رباب : مجموعه كلام). Hyderabad: Manjū Qamar Memorial Committee, 2005.
  • Manju Qamaraidullāhī. Ḍhaltā sūraj barḥtā sāyah. Ḥyderabad: Nigāh Publications, 1969.
  • Manju Qamaraidullāhī. Mirzā Ghālib: Urdū Drāmā. Hyderabad: Nigah Publications, 1969.
  • Manju Qamaraidullāhī. Kaccī kalī, tez kiran. Hyderabad: Nigah Publications, 1969.
  • Manju Qamaraidullāhī. Sastā joban, mahangā saz. Hyderabad: Nigah Publications, 1969.
  • Manju Qamaraidullāhī. Ek dhamākā dhīmī āg''. Hyderabad: Nigah Publications, 1969.
  • Manju Qamaraidullāhī. Jaltī javanī. Hyderabad: Nigah Publications, 1969.
  • Manju Qamaraidullāhī. Nīl Kī nāgin. Hyderabad: Nigah Publications, 1970.
  • Manju Qamaraidullāhī. Jhānsī kī Rānī ; Tārīk̲h̲ī ḍrāmah. Hyderabad: Nigah Publications, 1969.
  • Manju Qamaraidullāhī. Pīne ke baʻd : Soshīl ḍrāmah. Hyderabad: Nigah Publications, 1969.

حوالہ جات[ترمیم]