منشور بحر اوقیانوس

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
برطانوی جنگ جہاز پرنس آف ویلز پر روزویلٹ اور چرچل کانفرنس کے دوران (14 اگست 1941ء)

منشور بحر اوقیانوس (انگریزی: Atlantic Charter) جنگ عظیم دوم کے دوران ریاستہائے متحدہ امریکا کے صدر روزویلٹ اور برطانوی وزیر اعظم ونسٹن چرچل کا امن کے متعلق مشترکہ اعلان جو انہوں نے 14 اگست 1941ء کو بحر اوقیانوس میں ایک برطانوی جنگی بحری جہاز پر ایک کانفرنس کے بعد جاری کیا۔اس میں آٹھ بنیادی اصول شامل تھے۔ عدم علاقائی توسیع، متعلقہ آبادیوں کی مرضی کے بغیر علاقائی تبدیلیوں کی ممانعت، تمام اقوام کی حکومت خود اختیاری، عالمی تعاون، بھوک اور خوف سے نجات، لازمی خام مال تک مساوی رسائی، کھلے سمندروں میں جہاز رانی کی آزادی، محوری طاقتوں کا مکمل غیر مسلح کیا جانا اور جنگ کے بعد عام طور پر تخفیف اسلحہ۔ یہ اصول بعد میں اقوام متحدہ کے منشور میں شامل کر لیے گئے۔[1]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. محمد صدیق قریشی، کشاف اصطلاحات سیاسیات (حصہ اول)، مقتدرہ قومی زبان اسلام آباد، 1985ء، ص 60