منیزا علوی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
منیزا علوی
معلومات شخصیت
پیدائش 2 فروری 1954 (67 سال)[1]  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
لاہور[1]  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of Pakistan.svg پاکستان
Flag of the United Kingdom.svg مملکت متحدہ  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
مادر علمی یونیورسٹی آف یورک[1]  ویکی ڈیٹا پر (P69) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ مصنفہ،  شاعرہ[1]  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان انگریزی  ویکی ڈیٹا پر (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
ویب سائٹ
ویب سائٹ باضابطہ ویب سائٹ  ویکی ڈیٹا پر (P856) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

منیزا علوی (پیدائش: 2 فروری 1954) ایک پاکستانی برطانوی شاعرہ اور مصنف ہیں۔ اس نے اپنے کلام کے لئے متعدد مشہور انعامات جیتے ہیں۔

زندگی اور تعلیم[ترمیم]

منیزا علوی ایک پاکستانی والد اور ایک برطانوی والدہ کے ہاں پاکستان کے شہر لاہور میں پیدا ہوئیں۔ اس کے والد انگلینڈ کے شہر ہیٹفیلڈ، ہارٹفورڈشائر منتقل ہو گئے اس وقت علوی کی عمر کچھ ماہ تھی۔ [2] انہوں اپنی نظموں کی پہلی کتاب ’دی کنٹری ایٹ مائی شولڈر‘ کی اشاعت کے بعد تک پاکستان کا دورہ نہیں کیا۔ انہوں نے ایک ہائی اسکول ٹیچر کی حیثیت سے کئی سال کام کیا لیکن فی الحال وہ ایک آزادانہ مصنف اور ٹیوٹر ہیں ، جو نورفک میں رہتی ہیں۔

شاعری[ترمیم]

علوی کا کہنا ہے کہ: "'پاکستان میں میری خالاؤں کی طرف سے پیش کردہ تحائف' 'میری لکھی گئی نظموں میں پہلی نظم تھیں۔ جب میں نے یہ نظم لکھی تھی تو میں حقیقت میں پاکستان نہیں گئی تھی۔ نظم میں موجود لڑکی کی عمر تقریباً 13 سال کی ہوگی۔ یہ لگتا ہے کہ کپڑے اس کی طرح کسی طرح کی طرح کی طرح کی جھوٹی جلد کی طرح غیر آرام دہ اور پرسکون رہتے ہیں ، اور وہ سمجھتی ہیں کہ اس کے لئے چیزیں سیدھی نہیں ہیں۔ مجھے یہ محسوس ہوا کہ پاکستان نظمیں لکھنا ضروری ہے کیونکہ میں اپنے پس منظر سے رابطے میں تھی۔ اور ہوسکتا ہے کہ نظموں کے پیچھے کچھ ایسا پیغام ہو جس میں گزرے وقت کا تذکرہ ہو اور یہ کہ شاید ممکن ہو تو کچھ دروازے کھولنا چاہتا ہوں۔ " [3]

2002 میں انہیں اپنی شاعری کے لئے چلمونڈلی ایوارڈ ملا۔ 2003 میں ان کی شاعری کا ایک انتخاب دو لسانی ڈچ اور انگریزی ایڈیشن میں شائع ہوا۔ [4] اس کی سابقہ کتابوں ، اسپلٹ ورلڈ: نظمیں 1990–2005 میں سے ایک انتخاب 2008 میں شائع ہوا تھا۔ [5]

16 جنوری 2014 کو ، علوی نے بی بی سی ریڈیو 3 سیریز "مضمون - ایک نوجوان شاعر کو خط" میں حصہ لیا۔ رائنر ماریہ ریلکے کے کلاسیکی متن کو لیکر ، ایک نوجوان شاعر کو خطوط کے طور پر ، ان کے پریرتا کے طور پر ، معروف شعراء نے ایک پروٹجی کو ایک خط لکھا۔ [6]

منتخب کام[ترمیم]

شاعری[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب پ ت https://www.encyclopedia.com/arts/culture-magazines/alvi-moniza
  2. Biography، Moniza Alvi website.
  3. "'Presents from my Aunts in Pakistan' by Moniza Alvi (analysis)"، BBC GCSE Bitesize. Accessed مارچ 2016.
  4. Het land aan mijn schouder. Translations by Kees Klok. Sliedrecht: Wagner & Van Santen, 2003. آئی ایس بی این 90-76569-36-3۔
  5. Bloodaxe, آئی ایس بی این 978-1-85224-802-4
  6. "Moniza Alvi: The Essay, Letters to a Young Poet Episode 4 of 5"، BBC Radio 3, 2014.

بیرونی روابط[ترمیم]