میلوش زمان

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
میلوش زمان
(چیک میں: Miloš Zeman ویکی ڈیٹا پر مقامی زبان میں نام (P1559) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
تفصیل=

مدت منصب
1992 – 2002
وزیر اعظم 1998 - 2002
معلومات شخصیت
پیدائش 28 ستمبر 1944 (75 سال)[1][2][3][4]  ویکی ڈیٹا پر تاریخ پیدائش (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of the Czech Republic.svg چیک جمہوریہ  ویکی ڈیٹا پر شہریت (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
پیشہ سیاست دان، ماہر معاشیات  ویکی ڈیٹا پر پیشہ (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان چیکی زبان، روسی، انگریزی  ویکی ڈیٹا پر زبانیں (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
اعزازات
CZE Rad Bileho Lva 1 tridy BAR.svg گرینڈ کراس آف دی آرڈر آف دی وائیٹ لائن (2013)  ویکی ڈیٹا پر وصول کردہ اعزازات (P166) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
دستخط
Miloš Zeman Signature black.png 
ویب سائٹ
ویب سائٹ باضابطہ ویب سائٹ (چیکی زبان)  ویکی ڈیٹا پر باضابطہ ویب سائٹ (P856) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
IMDb logo.svg
IMDB پر صفحہ  ویکی ڈیٹا پر آئی ایم ڈی بی - آئی ڈی (P345) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

میلوش زمان (چیکی میں:Miloš Zeman) موجودہ صدر چیک جمہوریہ، ماہر معاشیات، صہیونی طرفدار اور اسلام کا نقاد ہے۔ آپ 1998 سے 2002 تک چیک جمہوریہ کا تیسرے وزیر اعظم تھے۔

تعلیم اور سیاست[ترمیم]

آپ کولین کے شہر میں 28 ستمبر 1944 کو پیدا ہوئے۔ آپ نے 1969 میں معاشیات کے یونیورسٹی سے معاشیات کی تعلیم حاصل کی۔ میلوش زمان اعلٰی تعلیم حاصل کرنے کے بعد کمیونسٹ پارٹی میں شامل ہو گئے۔ اس طرح انہوں نے سیاسی زندگی کا آغاز کیا۔ آپ 1993 میں چیک سوشل ڈیموکریٹک کی جماعت کے سربراہ منتخب ہوئے اور آپ 1998 میں چیک جمہوریہ کا تیسرے وزیر اعظم منتخب ہوئے۔ میلوش زمان صہیونی طرفدار اور اسلام کا بڑا نقاد ہے۔ وہ اعلان کرتا ہیں کہ اسلام مغربی تہذیب کے لیے (یورپ اور امریکا کے لیے) سب سے خطرناک اور ناٹو کا دشمن ہے ۔[5] انہوں نے ایک انٹرویو میں صحافیوں کو بتایا کیا کہ اسلامی ممالک اپنا مال تیل اور منشیات سے حاصل کرتے ہیں اور یہ مال دہشت گردی کی حمایت کرنے کے لیے استعمال میں آتا ہے [6] میلوش زمان کے مطابق مسلمانان مغربی تہذیب کو نقصان پہنچا رہے ہیں۔[7] 2002 میں میلوش زمان نے یاسر عرفات پر تنقید کی اور انہوں نے کھا کہ یاسر عرفات ایڈولف ہٹلر جیسا ہے ۔[8] آپ وزیرستان میں ڈرون حملوں کی حمایت کرتے ہیں۔ چیکی سیاستدنوں کے مطابق میلوش زمان کا نظریہ چیک جمہوریہ کی خارجی سیاست کو نقصان پہنچا رہا ہے۔ ایک ماہر اسلام اور یونیورسٹی کے پروفیسر Luboš Kropáček نے کہا کہ میلوش زمان کو اسلام سمجھ میں نہیں آ رہا ہے اور اس کی نظر اسلام کے بارے میں صرف بکواس ہے۔[6]

منابع[ترمیم]