مندرجات کا رخ کریں

وشاکھا ہری

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
وشاکھا ہری
 

معلومات شخصیت
پیدائش 20ویں صدی  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت بھارت   ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
پیشہ گلو کارہ   ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

وشاکھا ہری (انگریزی: Vishaka Hari) (ولادت: 21 مئی 1981ء) کارناٹک موسیقی گلوکارہ اور ہری کتھا کی حامی ہیں۔ انھیں کتھالاکشیپم کا قصہ گو بھی کہا جاتا ہے۔ وہ تعلیم سے چارٹرڈ اکاؤنٹنٹ ہیں۔

ابتدائی زندگی[ترمیم]

وشاکھا ہری 3 ستمبر 1978ء کو پیدا ہوئیں۔ وشاکھا نے کارناٹک کے ماہر، پدم وبھوشن سری لالگودی جئےرمن سے کارناٹک موسیقی سیکھی۔ ان کے روحانی گرو اور سسر سری سری کرشنا پریمی سوامیگل (سری سری انا) ہیں۔[1][2] انھوں نے ہری کتھا کا فن اپنے شوہر سری ہری جی سے سیکھا، جو ایک تجربہ کار ہریکاٹھہ ہیں اور تمل، انگریزی اور ہندی زبان میں تقریر کرتے ہیں۔

ان کا ایک بیٹا راجگوپالہ ہری ہے، جو 2007ء میں پیدا ہوا تھا۔

موسیقی کیریئر[ترمیم]

وشاکا ہری نے 2006ء سے چنئی موسیقی سیزن کے دوران میں کئی محفلوں میں اپنا فن پیش کیا ہے۔

ایوارڈ اور پہچان[ترمیم]

انھوں نے ہریکاٹھہ اور کارناٹک موسیقی کے شعبوں میں ان کی شراکت کے لیے بہت سارے انعامات اور ایوارڈز حاصل کیے ہیں۔

  • اپنے موسیقی کے گرو لالگودی جئےرمن کے ہاتھوں سے، واسانتاشریشتا، یعنی 'ویمن پار ایکسلینس' ایوارڈ ملا ہے۔[3]
  • تییاگرجا پرتھیوانی، ان کے روحانی گرو اور سسر پریمی سوامیگل کی طرف سے 'تیاگاراجا سوامی کی بازگشت' ملا۔
  • ستمبر 2016ء وہ ہندوستان کے سات معزز خواتین فنکاروں میں سے ایک ہیں۔[4]
  • 20 نومبر 2016ء کو، بھارتیہ ودیا بھون، چنئی نے مہمان خصوصی دن پر انفوسیس کے چیئرمین، آر شیشاسائی کے ذریعہ، وشاکا ہری کو 'لائف ٹائم اچیومنٹ' ایوارڈ دیا۔[5]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "The raconteur's raga"۔ 23 مئی 2008۔ اخذ شدہ بتاریخ 29 جولائی 2018 – www.thehindu.com سے 
  2. "From commerce to katha"۔ The Hindu (بزبان انگریزی)۔ اخذ شدہ بتاریخ 30 مارچ 2017 
  3. "Soulful Tunes – Indian Express"۔ Archive.indianexpress.com۔ 2013-01-24۔ اخذ شدہ بتاریخ 17 جنوری 2020 
  4. "7 women get M.S. Subbulakshmi Awards"۔ The Hindu۔ 14 ستمبر 2016۔ اخذ شدہ بتاریخ 16 مئی 2018 
  5. "Bhavan's cul-fest opens to a full house"۔ Kutcheribuzz.com۔ 2016-11-21۔ اخذ شدہ بتاریخ 29 جولا‎ئی 2018