پولسی فرقہ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

پانچویں صدی عیسوی میں ایک فرقہ جس کا نام پولسی تھا نمودار ہوا، اس نے یسوع مسیح کے بارے میں ایک بین بین رائے ظاہر کی، اس نے کہا کہ یسوع خدا نہیں تھے، بلکہ فرشتہ تھے۔ انہیں خدا نے دنیا میں بھیجا تھا، تاکہ وہ دنیا کی اصلاح کریں، چنانچہ وہ مریم ناصری کے بطن سے ایک انسان کی شکل اختیار کر کے پیدا ہوئے اور چونکہ خدا نے انہیں اپنا مخصوص جلال عطا کیا تھا، اس لیے وہ ”خدا کے بیٹے“ کہلائے۔ اس فرقے کے اثرات زیادہ تر ایشیائے کوچک اور آرمینیا کے علاقوں میں رہے ہیں[1] لیکن اس کو قبولِ عام حاصل نہ ہو سکا، کیونکہ یسوع کے فرشتے ہونے پر کوئی نقلی دلیل نہیں تھی۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. انسائکلوپیڈیا برٹانیکا، ص397، ج17، مقالہ پالیشنس