پٹواری

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

انگریز دور میں پٹواری پاکستان اور بھارت میں استعمال ہونے والی ایک اصطلاح ہے جس کا استعمال اس افسر یا عہدیدار کے لیے ہوتا ہے جو زمین کے متعلق دستاویزات وغیرہ رکھتا ہو۔ جب زمین کو خریدا یا فروخت کیا جاتا ہے تو پٹواری زمین کے کاغذات میں مالکان کے ناموں اور زمین کے متعلق دیگر معلومات کا تبادلہ کرتے ہیں۔ عام طور پر پٹواری نظام دیہاتی علاقوں میں ہوتا ہے؛ خاص کر ان علاقوں میں جہاں شرح تعلیم کم ہوتی ہے یہی وجہ ہے کہ اکثر دیکھا گیا ہے کہ پٹواری کا مقامی آبادی پر اثر و رسوخ بھی ہوتا ہے۔ یہ نظام پاکستان اور بھارت کے کئی علاقوں میں رائج ہے تاہم کچھ صوبوں نے الیکٹرونک طریقے سے زمین کے کاغذات کی رجسٹریشن شروع کی ہے جس میں کمپیوٹرائز طریقے سے زمین کی معلومات منتقل کی جاتی. رفتہ رفتہ پٹواری نظام ختم ہوتا جا رہا ہے ، بدلتے وقت اور کمپیوٹر کے استعمال کی وجہ سے پٹواری کا نام و نشان مٹنے کا اندیشہ تھا جس کے پیش نظر پاکستان میں اس نام کو زندہ رکھنے کے لئے آج سے بیس سال پہلے ایک مہم شروع کی گئی، اس مہم کے تحت تمام بے غیرتوں کو اکٹھا کیا گیا اور انہیں رفتہ رفتہ پٹواری کا نام دیا جانے لگا۔ اس وقت پاکستان بھر میں آخر الذکر پٹواریوں (مطمئن بے غیرتوں) کی تعداد لاکھوں میں ہے۔ ان پٹواریوں کا کام ایک ایسے بے غیرت خاندان کو تحفظ فراہم کرنا ہے جس میں باپ اور بیٹے انتہائی درجے کی بے غیرتی کا مظاہرہ کرتے ہوئے چوری کر کے بھاگ گئے ہیں جبکہ اپنی بیٹی کو پٹواریوں کے حوالے کر کے چلے گئے۔

مزید دیکھیے[ترمیم]