کمال الدین بہزاد

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
کمال الدین بہزاد
Kamal-ud-din Bihzad 001.jpg
 

معلومات شخصیت
پیدائش سنہ 1450  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
ہرات  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات سنہ 1535 (84–85 سال)[1][2]  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
ہرات  ویکی ڈیٹا پر (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
رہائش ہرات  ویکی ڈیٹا پر (P551) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of Iran.svg ایران  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
پیشہ مصور  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان فارسی[3]  ویکی ڈیٹا پر (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

کمال الدین بہزاد ایران کے مشہور ترین مصوروں میں شمار ہوتا ہے۔
مختصر تصاویر بنانے میں کمال رکھتا تھا۔ ابتدا میں ہرات میں سلطان حسین مرزا بایقرا کے دربار سے منسلک رہا۔ پھر صفیوں کے غلبے کے بعد ان کے دربار میں ملازم ہوا۔ اور شاہی کتب خانے کا خازن مقرر ہو گیا۔ بہزاد کی تصویروں میں خطوط کی نفاست اور زیبائی دیکھ کر ذہن کے افق پر چینی فن کاروں کی یاد ابھرتی ہے۔ اس نے تیمور نامہ ،بوستان سعدی اور نظامی کی تصانیف کو مصور کیا تھا۔ میر سید علی ’’جسے ہمایون اپنے ہمراہ ہندوستان لایا‘‘ بھی بہزاد کا شاگرد تھا۔1524ء میں زندہ تھا۔

نگار خانہ[ترمیم]

  1. Internet Speculative Fiction Database author ID: http://www.isfdb.org/cgi-bin/ea.cgi?117916 — بنام: Behzad
  2. بی این ایف - آئی ڈی: https://catalogue.bnf.fr/ark:/12148/cb13166434v — بنام: Kamāl al-Dīn Behzād — مصنف: Bibliothèque nationale de France — عنوان : اوپن ڈیٹا پلیٹ فارم — اجازت نامہ: آزاد اجازت نامہ
  3. Identifiants et Référentiels — اخذ شدہ بتاریخ: 23 مئی 2020 — ناشر: Bibliographic Agency for Higher Education