گرو ہارلم برنت لاند

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں
گرو ہارلم برنت لاند
Gro Harlem Brundtland (cropped).jpg
22nd Prime Minister of Norway
عہدہ سنبھالا
3 نومبر 1990 – 25 اکتوبر 1996
شاہی حکمران Olav V
ہارالد پنجم
پیشرو Jan Syse
جانشین Thorbjørn Jagland
عہدہ سنبھالا
9 مئی 1986 – 16 اکتوبر 1989
شاہی حکمران Olav V
پیشرو Kåre Willoch
جانشین Jan Syse
عہدہ سنبھالا
4 فروری 1981 – 14 اکتوبر 1981
شاہی حکمران Olav V
پیشرو Odvar Nordli
جانشین Kåre Willoch
Director-General of the عالمی ادارہ صحت
عہدہ سنبھالا
13 مئی 1998 – 21 جولائی 2003
Secretary-General کوفی عنان
پیشرو Hiroshi Nakajima
جانشین Lee Jong-wook
Leader of the Labour Party
عہدہ سنبھالا
12 ستمبر 1979 – 25 اکتوبر 1996
پیشرو Reiulf Steen
جانشین Thorbjørn Jagland
Minister of the Environment
عہدہ سنبھالا
1 جولائی 1974 – 19 مارچ 1979
وزیر اعظم Trygve Bratteli
Odvar Nordli
پیشرو Tor Halvorsen
جانشین Rolf Arthur Hansen
ذاتی تفصیلات
پیدائش Gro Harlem
20 اپریل 1939ء (عمر 79 سال)
Bærum، ناروے
سیاسی جماعت Labour
شریک حیات Arne Olav Brundtland
اولاد 4
مادر علمی University of Oslo
جامعہ ہارورڈ
دستخط
گرو ہارلم برنت لاند ( 2007 )

گرو ہارلم برنت لاند ایک سابقہ نارويجن سیاست دان ہيں۔ وہ تین بار ناروے کی منتخب وزیر اعظم رہی ہيں۔ ان کا دور حکومت 1981 ميں شروع ہوا، پھر 1986 سے 1989 اور آخری بار 1990 سے 1996 تک وہ ملک کی وزیر اعظم رہی ہيں۔ گرو ناروے کی پہلی خاتون وزیر اعظم اور نارویجن ليبر پارٹی کی 1981 سے 1992 تک پہلی خاتون صدر رہی ہيں۔

گرو 20 اپريل 1939 میں ناروے کے دار الحکومت اوسلو میں پیدا ہوئیں۔ انہوں نے 1963 میں اوسلو یونیورسٹی سے ڈاکٹری کی ڈگری لی۔ 1965 میں انہوں نے نے ھارورڈ یونیورسٹی سے پبلک ھیلتھ میں ایم اے پاس کیا۔ 1968 سے 1974 کے دوران میں گرو نے ڈاکٹر کے طور پر کام کیا ۔

سیاسی زندگی[ترمیم]

گرو 1974 سے 1979 تک ناروے کی لیبر پارٹی کی ماحولیاتی وزیر رہی ہیں۔ 1981 میں فروری اور اکتوبر کے درمیاں وہ ناروے کی پہلی وزیر اعظم رہی ہیں۔ 1981 میں انتخابات میں شکست کے بعد انہوں نے نارویجن لیبر پارٹی کی قیادت سنبھالی۔ اور اپوزیشن لیڈر کا رول ادا کیا۔ 1986 میں انتخاب جیت کر وہ دوبارہ وزیر اعظم منتخب ہوئیں۔ ان کا دور حکومت 1989 تک رہا، اس دوران میں ناروے معاشی بحران کا شکار ہوا جس کے نتیجے میں گرو 1989 کا انتخاب ہار گئیں۔ لیکن ان کے بعد قاّْئم ہونے والی دائیں بازو کی حکومت زیادہ عرصے تک نہ چل سکی، نتیجتا گرو نے 1990 میں دوبارہ اقتدار سنبھالا۔ اس دوران میں ناروے کی سیاسی زندگی میں گرو کی ساکھ بہت مضبوط تھی، تاہم 25 اکتوبر 1996 کو انہوں نے وزارت عظمی سے استعفی دے دیا ۔

1998 میں گرو عالمی ادارہ صحت کی صدر منتخب ہوئیں۔ 2003 میں انہیں سال کا بہترین پالیسی رہنما قرار دیا گیا لیکن 2003 کے موسم گرما میں انہوں نے اس عہدے سے استعفی دے دیا اور اپنے خاوند کے ساتھ فرانس منتقل ہو گئیں ۔

1908 میں گرو ایک اسکینڈل کا شکار ہوئیں کیونکہ کچھ عرصہ پہلے انہوں نے ناروے میں سرطان کا اپریشن کروایا تھا، فرانس رہنے کی وجہ سے وہ ناروے کی حکومت کو ٹیکس ادا نہیں کرتیں تھیں اس لیے وہ مفت علاج کی مستحق نہیں تھیں۔ تاہم گرو نے اعلان کر دیا کہ وہ ناروے میں کرائے گئے اپنے اپریشن کے اخراجات خود ادا کریں گی، مزید براں وہ ناروے منتقل ہو جائیں گی ۔