گھریلو چڑیا

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں
اضغط هنا للاطلاع على كيفية قراءة التصنيف

قدیم دنیوی چڑیا
(Old World sparrows)

گھریلو چڑیا
گھریلو چڑیا

مادہ چڑیا
مادہ چڑیا
اسمیاتی درجہ خاندان[1][2][3][4][5][6]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں صنف بندی درجہ (P105) ویکی ڈیٹا پر
جماعت بندی
المملكة: جانور
الشعبة: حبلیات
الطائفة: پرندہ
الرتبة: عصفوری نسل
الرتيبة: Passeri
الفصيلة: Passeridae
Illiger, 1811
الجنس: Passer
النوع: Sparrow
سائنسی نام
Passeridae[1][2][4][5][3][6][7]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں صنف بندی نام (P225) ویکی ڈیٹا پر
Johann Karl Wilhelm Illiger ، 1811  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں صنف بندی نام (P225) ویکی ڈیٹا پر
اجناس
Passer

Petronia
Carpospiza
Montifringilla

‏‏
  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں کومنز نگارخانہ (P935) ویکی ڈیٹا پر


گھریلو چڑیا کا طفل۔

چڑیا، ایشیا، یورپ اور افریقہ میں پایا جانے والا پرندہ ہے جس کا تعلق پاسر ڈومیسٹیکس (Passer domesticus) خاندان اور جماعت Aves سے ہے۔۔ چڑیا، دنیا کے سارے براعظموں میں پائے جاتے ہیں۔ ہاں ان کے اقسام مخطلف ہیں۔ برصغیر میں چڑیا ایک عام پرندہ ہے، جسے گھریلو چڑیا بھی کہتے ہیں، جس سے ہرکس و ناکس واقف ہے۔

جسامت، خواص اور درجہ بندی[ترمیم]

عام طور پر یہ چڑیا، چھوٹے جسامت کے ہوتے ہیں۔ ان کا رنگ گندمی-بھورا ہوتاہے۔ اس کی دم چھوٹی اور چوڑی ہوتی ہے۔ اس کی چونچ کافی مضبوط ہوتی ہے۔ بنیادی طور پر یہ دانے چگنے والے ہیں۔ ساتھ ساتھ یہ چھوٹے چھوٹے کیڑوں کو تغذیہ کے طور پر کھاتے ہیں۔ ان کو گھریلو چڑیا اس لیے کہتے ہیں کہ، گھروں میں اپنا بسیرا کرتے ہیں۔ ان میں پاسر ایمینی بے کا طور 11۔4 سنٹی میٹر اور وزن 13.4 گرام ہوتاہے۔ اور پاسر گونگونینسس کا طول 18 سنٹی میٹر اور وزن 42 گرام رہتاہے۔[8]

یہ انیسویں صدی سے امریکا میں بھی پھیل گیا ہے جہاں اسے قدیم امریکی چڑیا کی اقسام سے متفرق کرنے کے لیے انگریزی چڑیا کہا جاتا ہے۔ امریکا کی انگریزی چڑیائیں 1850 سے 1875 کے درمیان برطانیہ سے حشرات کی تعداد کو قابو میں رکھنے کے لیے درامد کیے گئے تھے۔ اس کا ناپ بارہ سے سترہ سنٹی میٹر تک ہوتا ہے۔ نر چڑیا یا چڑے کی گردن پر کالے پروں کا نشان ہوتا ہے۔

ادب میں چڑیا[ترمیم]

چڑیا اتنا عام پرندہ ہے کہ اس پر بچوں کی دلچسپ کہانیاں، نظم گیت وغیرہ بھی موجود ہیں۔ اور کئی فلموں میں بھی اس پر گیت سننے کو ملتے ہیں۔ اور تحتانوی جماعتوں کی درسی کتب میں، “ننھی منی چڑیا“ نام سے اسباق بھی دیکھے جاسکتے ہیں۔

ہجرت[ترمیم]

پرندی ہجرت (bird migration)

گھریلو چڑیاں (چڑیئں) عام طور پر ہجرت نہیں کیا کرتیں بلکہ یہ انسانی آبادیوں کے قریب خود کو محدو رکھتی ہیں، بعض اوقات یہ آوارہ گردی یا خانہ بدوشی (nomadic) حالت میں دور تک نکل سکتی ہیں لیکن یہ مقامی نقل مکانی ہوتی ہے جس کا سبب خوراک کی تلاش ہوتا ہے اور اسے پرندوں کی دور دراز ہجرت میں شمار نہیں کیا جاتا۔[9]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ 1.0 1.1 1.2 عنوان : Integrated Taxonomic Information System — شائع شدہ از: 1998
  2. ^ 2.0 2.1 2.2 عنوان : IOC World Bird List. Version 6.3 —  : اشاعت 6.3 — https://dx.doi.org/10.14344/IOC.ML.6.3
  3. ^ 3.0 3.1 3.2 عنوان : IOC World Bird List. Version 7.2https://dx.doi.org/10.14344/IOC.ML.7.2
  4. ^ 4.0 4.1 4.2 عنوان : IOC World Bird List, Version 6.4https://dx.doi.org/10.14344/IOC.ML.6.4
  5. ^ 5.0 5.1 5.2 عنوان : IOC World Bird List, Version 7.1https://dx.doi.org/10.14344/IOC.ML.7.1
  6. ^ 6.0 6.1 6.2 عنوان : IOC World Bird List. Version 7.3https://dx.doi.org/10.14344/IOC.ML.7.3
  7.   خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں دائرۃ المعارف حیات آئی ڈی (P830) ویکی ڈیٹا پر"معرف Passeridae دائراۃ المعارف لائف سے ماخوذ"۔ eol.org۔ اخذ کردہ بتاریخ 17 اپریل 2018۔ 
  8. Bledsoe, A.H. & Payne, R.B. (1991)۔ Forshaw, Joseph, ویکی نویس۔ Encyclopaedia of Animals: Birds۔ London: Merehurst Press۔ صفحہ 222۔ آئی ایس بی این 1-85391-186-0۔ 
  9. About.com پر House Sparrow مضمون میں گھریلو چڑیوں کی ہجرت و خانہ بدوشی کا ذکر