گیارہویں شریف

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں

گیارہویں شریف شیخ عبدالقادر جیلانی کی پیدائش سے منسوب ہے۔ غوث الاعظم کی نسبت سے ہر ماہ چاند کو گیارہ تاریخ کی منائی جاتی ہے۔ عموماً ایسی محافل میں نعت خوانی، مناقب، ذکر و اذکار اور صلوۃ و سلام پڑھا جاتا ہے۔ گیارہویں شریف کی نسبت سے کی جانے والی محافل میں عموماً لنگر کا اہتمام بھی کیا جاتا ہے۔ گیارہویں شریف کا مطلب یہ ہے کہ حلال، پاک چیز از جنس ماکول(کھانے کی اشیاء) و مشروب تیار کرکے فقراء و مساکین وغیرھم کو کھلا پلاکر اس کا ثواب حضور پُرنور غوث اعظم کی روح کو پہنچایا جاتا ہے۔[1]

گیارہویں کی وجہء تسمیہ

’’کلیات جدولیہ فی احوال اولیاء اللہ، المعروف بتحفۃ الابرار ‘‘صفحہ29 میں بحوالہ ’’تکملہ ذکرالاصفیاء ‘‘گیارہویں کی وجہ تسمیہ یہ لکھی ہے کہ آپ ہر ماہ میں گیارہ تاریخ چاند کو عرس رسالت مآب صلی اللہ تعالٰی علیہ وآلہ وسلم کیا کرتے تھے اس وجہ سے گیارہویں آپ کے نام سے مشہور ہے۔

گیارہویں شریف ایصال ثواب کی ایک قسم ہے، اور ایصال ثواب قران و حدیث سے ثابت ہے ۔ شاہ عبدالحق محدث دہلوی گیارہویں شریف کے متعلق فرماتے ہیں:

شیخ محقق شاہ عبدالحق محدث دہلوی اپنی کتاب ’’ماثبت من السنہ‘‘ میں لکھتے ہیں کہ میرے پیرومرشد شیخ عبدالوہاب متقی مہاجر مکی 9 ربیع الثانی کو غوث اعظم کو عرس کرتے تھے، بے شک ہمارے ملک میں آج کل گیارہویں تاریخ مشہور ہے اور یہی تاریخ آپ کی ہندی اولاد و مشائخ میں متعارف ہے۔[2]

حوالہ جات

  1. گیارہویں شریف کیا ہے؟
  2. ماثبت من السنہ از: شاہ عبدالحق محدث دہلوی، عربی، اردو مطبوعہ دہلی ص 167