کساد عظیم

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
ڈوروتھیا لینگ کی مشہور تصویر "مہاجر ماں" جو کیلیفورنیا کے مفلس کسانوں کی حالت کی عکاس ہے، تصویر کے وسط میں 32 سالہ فلورنس اونز تھامسن ہیں، جو سات بچوں کی ماں تھیں۔ مارچ 1936ء

کساد عظیم (انگریزی: The Great Depression) دوسری جنگ عظیم سے قبل کی دہائی میں ایک عالمی اقتصادی بحران تھا۔ مختلف ممالک میں یہ مختلف ادوار میں رہا، لیکن بیشتر ممالک میں یہ بحران 1929ء سے لے کر 1930ء کی دہائی کے اواخر یا 1940ء کی دہائی کے اوائل تک رہا۔ یہ 20 ویں صدی کا سب سے بڑا، سب سے بڑے علاقے پر محیط اور سب سے گہرا بحران تھا اور آج 21 ویں صدی میں بھی عالمی معیشت کے زوال کے حوالے سے اس بحران کی مثال دی جاتی ہے ۔ بحران کا آغاز ریاستہائے متحدہ امریکہ میں 29 اکتوبر 1929ء کو بازار حصص کے ٹوٹنے سے ہوا تھا (جسے سیاہ منگل کہا جاتا ہے)، لیکن انتہائی تیزی سے یہ بحران دنیا کے ہر ملک تک پھیل گیا۔

کساد عظیم نے دنیا کے تقریبا ہر ملک، غریب و امیر دونوں، پر تباہ کن اثرات مرتب کیے۔ ذاتی آمدنی، محصول کی آمدنی، نفع و قیمتوں میں کمی، اور بین الاقوامی تجارت نصف سے دو تہائی رہ گئی۔ امریکہ میں بے روزگاری کی شرح 25 فیصد ہوگئی اور چند ممالک میں تو یہ شرح 33 فیصد تک پہنچ گئی۔ دنیا بھر کے شہر بہت زیادہ متاثر ہوئے، خصوصا وہ جو بھاری صنعت پر انحصار کرتے تھے۔ کئی ممالک میں تعمیرات کا کام تقریبا ختم ہو گیا۔ فصلوں کی قیمتیں تقریبا 60 فیصد تک گرنے کی وجہ سے کھیتی باڑی اور دیہی علاقے بھی متاثر ہوئے۔

اس بحران کے بعد 1930ء کی دہائی کے وسط سے صورتحال بہتر ہونا شروع ہوئی، لیکن کئی ممالک میں کساد عظیم کے اثرات نے دوسری جنگ عظیم کے آغاز تک معیشت کو جکڑے رکھا۔ چین پر کساد عظیم کا کوئ اثر نہیں ہوا۔

وجہ[ترمیم]

اس عظیم کساد بازاری کی اصل وجہ فیڈرل ریزرو تھا جیسا کہ اسکے گورنر نے اعتراف کیا I would like to say to Milton and Anna: Regarding the Great Depression. You're right, we did it. We're very sorry. But thanks to you, we won't do it again. [1]

مزید دیکھیئے[ترمیم]

حوالہ[ترمیم]

  1. ^ http://www.federalreserve.gov/boarddocs/speeches/2002/20021108/default.htm Remarks by Governor Ben S. Bernanke