ابو حاتم اسفزاری

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

جب اسلامی دور حکومت دنیا میں اپنے عروج پر تھا تو ایران کے ابو حاتم اسفزاری نے مختلف دھاتوں کا وزن کر نے کے لیے دو اکائیوں کا استعمال شروع کیا یعنی درہم اور اوقیہ۔ جب مسلمانوں کے علمی خزانے یورپ منتقل ہوئے تو یہ وزن بھی وہاں پہنچے۔ رفتہ رفتہ درہم گرام بن گیا اور اوقیہ اونس بن گیا۔