ارونگ کرسٹول

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
ارونگ کرسٹول
Irving Kristol HS Yearbook.jpg 

معلومات شخصیت
پیدائش 22 جنوری 1920[1][2][3][4]  ویکی ڈیٹا پر تاریخ پیدائش (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
بروکلن، نیویارک  ویکی ڈیٹا پر مقام پیدائش (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات 18 ستمبر 2009 (89 سال)[5][1][2][3][4]  ویکی ڈیٹا پر تاریخ وفات (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
آرلنگٹن، ورجینیا  ویکی ڈیٹا پر مقام وفات (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وجۂ وفات پھیپھڑوں کا سرطان  ویکی ڈیٹا پر وجۂ وفات (P509) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
طرز وفات طبعی موت  ویکی ڈیٹا پر طرزِ موت (P1196) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of the United States (1795-1818).svg ریاستہائے متحدہ امریکا  ویکی ڈیٹا پر شہریت (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
جماعت ریپبلکن پارٹی  ویکی ڈیٹا پر سیاسی جماعت کی رکنیت (P102) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
رکن امریکی اکادمی برائے سائنس و فنون  ویکی ڈیٹا پر رکن (P463) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
مادر علمی نیویارک سٹی کالج  ویکی ڈیٹا پر تعلیم از (P69) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ مؤرخ، ماہرِ عمرانیات، ناشر، صحافی، سیاست دان، فلسفی  ویکی ڈیٹا پر پیشہ (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان انگریزی[6]  ویکی ڈیٹا پر زبانیں (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
ملازمت جامعہ نیور یارک  ویکی ڈیٹا پر نوکری (P108) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عسکری خدمات
شاخ امریکی فوج  ویکی ڈیٹا پر عسکری شاخ (P241) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
لڑائیاں اور جنگیں دوسری جنگ عظیم  ویکی ڈیٹا پر لڑائی (P607) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
اعزازات
فرانسیس بوہر اعزاز (1991)
Presidential Medal of Freedom (ribbon).png صدارتی تمغا آزادی  ویکی ڈیٹا پر وصول کردہ اعزازات (P166) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

امریکی دانشور اور مصنف۔ ارونگ کرسٹول 22 جنوری 1920 کو نیویارک کے بروکلین علاقے میں پیدا ہوئے۔ وہ یوکرین سے ترکِ سکونت کرنے والے یہودی تارکینِ وطن والدین کی اولاد تھے۔ تیس کی دہائی میں ٹارٹسکی کے خیالات سے متاثر ہو گئے تاہم بعد ازاں انہوں نے ٹارٹسکی کے قدامت پسندانہ بائیں بازو کے خیالات پر لبرل ازم کو ترجیح دی۔ تاہم ساٹھ کی دہائی میں ’نیو لیفٹ‘ کے عروج کے بعد انہوں نے لبرل ازم کو بھی چھوڑ دیا۔ ستّر کی دہائی میں انہوں نے ریپبلکن پارٹی میں شمولیت اختیار کی جو ایک زمانے میں خود ان کے لیے بقول ان کے ’اتنی ہی اجنبی تھی جتنا کہ میرا کسی کاتھولک عبادت میں حصہ لینا‘۔۔ سن 2003 میں اپنی ایک تحریر میں کرسٹول نے نیو کنزرویٹزم کو ایک نقطۂ نظر قرار دیا تھا اور کہا تھا کہ اس کی جڑیں ستر کی دہائی کے مایوس لبرل مفکرین میں ہیں۔ یوکنزرویٹزم کی اصطلاح اشتراکی مصنف مائیکل ہیرنگٹن نے ستر کی دہائی کے اوائل میں ایجاد کی تھی۔ ارونگ کرسٹول کے بارے میں نیوکنزرویٹزم کے شریک بانی نارمن پاڈہارٹز کا کہنا تھا کہ ’ارونگ کرسٹول کے خیالات کا اثر گزشتہ چالیس برس کے دوران میں امریکی رائے کی شکل بدلنے والے عناصر میں سب سے اہم ہے ‘۔ بش انتظامیہ پر ارونگ کا گہرا اثر پایا جاتا تھا اور سنہ 2002 میں انہیں امریکی صدر جارج بش نے صدارتی تمغۂ آزادی بھی دیا۔ 18 ستمبر 2009 کو ان کا انتقال ہوا۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب اجازت نامہ: CC0 نقص حوالہ: نادرست <ref> ٹیگ؛ نام "45a6304d9659611674c59fb521d89649baefa5ea" مختلف مواد کے ساتھ کئی بار استعمال ہوا ہے۔
  2. ^ ا ب http://data.bnf.fr/ark:/12148/cb12439820r — اخذ شدہ بتاریخ: 10 اکتوبر 2015 — اجازت نامہ: آزاد اجازت نامہ
  3. ^ ا ب ایس این اے سی آرک آئی ڈی: https://snaccooperative.org/ark:/99166/w61q02dk — بنام: Irving Kristol — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  4. ^ ا ب امریکن نیشنل بائیوگرافی آئی ڈی: https://doi.org/10.1093/anb/9780198606697.article.1603586 — بنام: Irving William Kristol — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  5. http://www.foxnews.com/story/2009/09/18/irving-kristol-godfather-neo-conservatism-dies-at-8/?test=latestnews
  6. http://data.bnf.fr/ark:/12148/cb12439820r — اخذ شدہ بتاریخ: 10 اکتوبر 2015 — اجازت نامہ: آزاد اجازت نامہ