اقبال درانی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
اقبال درانی
معلومات شخصیت
پیدائش 26 فروری 1956ء (عمر 63 سال)
بانکا، بہار  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام پیدائش (P19) ویکی ڈیٹا پر
قومیت Indian
زوجہ Mamta Durrani
اولاد Mashaal Durrani
والدین Shujayat Ali (Father)
عملی زندگی
پیشہ Writer, director,producer
ویب سائٹ
ویب سائٹ iqbaldurrani.tripod.com
IMDb logo.svg
IMDB پر صفحہ  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں آئی ایم ڈی بی - آئی ڈی (P345) ویکی ڈیٹا پر

اقبال درانی ایک بھارتی مصنف ، ڈائریکٹر، اداکار اور ہندی فلموں کے پروڈیوسر ہیں۔[1] وہ 26 جنوری 1956ء میں جھنکا، بہار بھارت میں پیدا ہوا۔ ان کے والد کا نام شجاعت علی تھا۔ ان کی بیوی ممتا درانی اور ان کی اولاد مشعال درانی ہے۔ انہوں نے بہت سی ادبی بات چیت کی آڈیو کیسٹس شائع کیں۔ مصنف کے طور پر انہوں نے جھاڑ کند کےانقلابی قبائل پر "برسامنڈا" اور "گاندھی سے پہلے گاندھی " لکھی جو 2008ء میں شائع ہوئی۔ ادبی اور فلمی دنیا دونوں ہی میں ان کو بہت پزیرائی ملی اور اسے ہندی ادب میکسم گورکے کی کتاب "ماں" کے پائے تصنیف سمجھا گیا۔ انہیں جین قومیت کی تنظیموں کی طرف سے مختلف مواقع پر بھگوان مہاویر اور اس کی تعلیمات پر مقالہ پڑھنے کے لیے مدعو کیا گیا۔ ایسا اس طرح ہوا کہ ایک مسلم ہونے کے باوجود بھگوان مہاویر کے جین پادریوں کے سامنے دیجیبر مندر رانچی میں مدعو کیا گیا۔ جس دنیا میں مذہب ہتھیار کے طور پر استعمال ہو رہا تھا وہاں انہوں نے وسیع پیمانے پر اس فرق کو ختم کرنے کی کوشش کی جو لوگوں کے درمیان میں حائل تھا۔ درانی انسانی حقوق ایسوسی ایشن (جھاڑکنڈ) کے چئیر پرسن ہیں اور اس کے علاوہ امن کمیٹی بینک اور آئی ٹرسٹ ممبئی کے بھی چیئرپرسن ہیں۔ انہوں نے اپنی سماجی سرگرمیوں اور تحریروں کے لیے کئی اعزاز حاصل کیے۔ جن میں جھاڑکنڈ رتنا ایوارڈ سال 2008ء رانچی میں پی ٹی رگھو ناتھ رائے سناتھلی سینما اور آرٹ راجیو گاندھی گلوبل ایکسیلنس ایوارڈ 2010 میں نئی دہلی اردو اخبار انڈیا کے تحت ملا۔ 2011ء میں مہاراج یشونتر ہولکر پراتھشن نے بابا صاحب امبیڈکر ایوارڈ ، ودیا ویچسپتی ڈگری(ڈاکٹر کی ڈگری کے برابر) صحتیہ کلا سنگم پرتاپ گڑھ سے نوازا۔ 2009ء میں وہ لوک سبھا کے خلاف گئے اور نتیجتاً انہیں اپنے کچھ اثاثوں سے ہاتھ دھونا پڑا۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "Iqbal Durrani"۔ مورخہ 24 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 12 دسمبر 2012۔

بیرونی روابط[ترمیم]