بیٹی سنوبال

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
بیٹی سنوبال
Betty Snowball.jpg
ذاتی معلومات
مکمل نامالزبتھ الیگزینڈرا سنوبال
پیدائش9 جولائی 1908(1908-07-09)
Burnley، لنکاشائر، انگلستان
وفات13 دسمبر 1988(1988-12-13) (عمر  80 سال)
کولوال، ہیرفورڈشائر، انگلستان
عرفبیٹی
بلے بازیدائیں ہاتھ سے
حیثیتوکٹ کیپر
بین الاقوامی کرکٹ
قومی ٹیم
پہلا ٹیسٹ (کیپ 7)28 دسمبر 1934  بمقابلہ  آسٹریلیا
آخری ٹیسٹ22 فروری 1949  بمقابلہ  آسٹریلیا
قومی کرکٹ
سالٹیم
1937ہمپشائر وومن
1937ویسٹ آف انگلینڈ وومن
امپائرنگ معلومات
ٹیسٹ امپائر1 (1951–1951)
کیریئر اعداد و شمار
مقابلہ ٹیسٹ
میچ 10
رنز بنائے 613
بیٹنگ اوسط 40.86
100s/50s 1/4
ٹاپ اسکور 189
کیچ/سٹمپ 13/8
ماخذ: کرکٹ آرکیو، 18 ستمبر 2008

الزبتھ "بیٹی" الیگزینڈرا سنوبال (9 جولائی 1908 ء - 13 دسمبر 1988) ایک انگریز کھلاڑی خاتون تھیں۔ انھوں نے انگلینڈ کی خواتین کرکٹ ٹیم میں بین الاقوامی کرکٹ کھیلی، اور اسکاٹ لینڈ کے لئے بین الاقوامی اسکواش اور لاکروس بھی کھیلا۔ انہوں نے فروری 1935ء میں کرائسٹ چرچ میں نیوزی لینڈ کے خلاف کھیلتے ہوئے 222 منٹ میں 189 رنز بنائے تھے، وہ خواتین کا چوتھا ٹیسٹ میچ تھا جوکھیلا گیا، خواتین ٹیسٹ کرکٹ میں سب سے زیادہ انفرادی اننگز کا عالمی ریکارڈ قائم کیا تھا، جو سنڈھیا تک 50 سال سنہیں ٹوٹ سسکا تھا، اگروال نے 1986ء میں 190 رنز بنا کر یہ ریکارڈ توڑا۔ یہ کسی انگریز خاتون کا ٹیسٹ کرکٹ میں سب سے بڑا اسکور ہے۔

سنوبال برنلے، نکاشائر، میں پیدا ہوئی تھیں۔ ان کے والد، تھامس سنوبال، اسکاٹ لینڈ کے ڈاکٹر تھے۔ ان کی تعلیم سینٹ اینڈریوز کے سینٹ لیونارڈس اسکول اور پھر بیڈفورڈ فزیکل ٹریننگ کالج سے ہوئی۔جس کے بعد وہ ونچسٹر کے سینٹ سوتھن اسکول میں جسمانی تعلیم کی ٹیچر بن گئیں۔

اس کے والد ایک سرگرم کلب کرکٹ کھلاڑی تھے، اور انہوں نے اپنی بیٹی کو اسکول میں کھیلنے کی ترغیب دی تھی۔ وہ اوپننگ بلے باز اور وکٹ کیپر بن گئیں، اور کچھ عرصے تک لیری کانسٹینٹائن نے اس کی تربیت کی۔ انہوں نے انگلینڈ کے لئے 1934 سے 1949 تک 10 ٹیسٹ میچ کھیلے، جن میں خواتین کے ذریعہ کھیلے جانے والے پہلے سات ٹیسٹ میں سے ہر ایک میں وہ شامل تھیں، دسمبر 1934 میں آسٹریلیا کے خلاف برسبین میں آسٹریلیا کے خلاف جولائی 1937ء میں اوول میں ہونے والے پہلے ویسٹ ٹیسٹ میں، دوسری سنچری اسکور کرنے سے بالترتیب 99 رنز بنا کر آؤٹ ہوئی۔ انہوں نے 1934–35 اور 1948–49 میں دو بار آسٹریلیا کا دورہ کیا اور ان کی وکٹ کیپنگ کو برٹ اولڈ فیلڈ سے تشبیہ دی گئی۔ انہوں نے 40.86 کی بیٹنگ اوسط سے 613 رنز بنائے۔ اسٹمپ کے پیچھے، اس نے 13 کیچ اور 8 اسٹمپنگس لیں۔

حوالہ جات[ترمیم]