جنگ کریمیا

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
جنگ کریمیا
سلسلہ یورپ میں عثمانی جنگیں،ترک روس جنگیں  ویکی ڈیٹا پر (P361) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
Malakhov1.jpg
عمومی معلومات
آغاز اکتوبر 1853[1]  ویکی ڈیٹا پر (P580) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
اختتام فروری 1856[1]  ویکی ڈیٹا پر (P582) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مقام جزیرہ نما کریمیا،  قفقاز،  بلقان،  بحیرہ اسود،  بحیرہ بالٹک،  بحیرہ ابیض،  جزیرہ نما کامچاٹکا  ویکی ڈیٹا پر (P276) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
متحارب گروہ
اتحادی:
سلطنت فرانس
سلطنت عثمانیہ
سلطنت برطانیہ
سلطنت سارڈینیا
سلطنت روس
بلغاروی رضاکار
قوت
3 لاکھ ترک
4 لاکھ فرانسیسی
ڈھائی لاکھ برطانوی
اٹھارہ ہزار سارڈینیائی
7 لاکھ روسی
4 ہزار بلغاروی
نقصانات
کل 5 لاکھ اموات 60 ہزار سے ایک لاکھ دس ہزار تک اموات

جنگ کریمیا مارچ 1854ء سے فروری 1856ء تک جزیرہ نما کریمیا میں لڑی جانے والی ایک جنگ تھی جس میں ایک جانب سلطنت روس اور دوسری جانب فرانس، برطانیہ، سلطنت سارڈینیا اور سلطنت عثمانیہ کی متحدہ فوج تھی۔ بیشتر جنگ جزیرہ نما کریمیا میں لڑی گئی تاہم کچھ معرکے ترکی اور بحیرۂ بالٹک کے خطوں میں بھی ہوئے۔ کبھی کبھار جنگ کریمیا کو پہلا "جدید" معرکہ قرار دیا جاتا ہے جس کے دوران جنگی انداز میں ایسی تکنیکی تبدیلیاں واقع ہوئیں جنہوں نے مستقبل کی جنگوں پر اثرات ڈالے۔

جنگ کا خاتمہ معاہدۂ پیرس اور اتحادیوں کی فتح کے ساتھ ہوا۔ یہ جنگ علاقے میں روسی اثر و رسوخ کے لیے تباہ کن ثابت ہوئی۔

  1. ^ ا ب https://www.britannica.com/event/Crimean-War