جیشودابن

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
جیشودابن
تفصیل= جیشودابن کی تصویر

معلومات شخصیت
پیدائش سنہ 1952 (عمر 66–67 سال)  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ پیدائش (P569) ویکی ڈیٹا پر
گجرات  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام پیدائش (P19) ویکی ڈیٹا پر
شہریت Flag of India.svg بھارت  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں شہریت (P27) ویکی ڈیٹا پر
مذہب ہندو مت
شوہر نریندر مودی  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں شریک حیات (P26) ویکی ڈیٹا پر
عملی زندگی
پیشہ معلمہ  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں پیشہ (P106) ویکی ڈیٹا پر
پیشہ ورانہ زبان گجراتی  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں زبانیں (P1412) ویکی ڈیٹا پر

جیشودابن (پیدائش:1952) بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی کی کشیدہ تعلق رکھنے والی بیوی ہیں۔ یہ شادی 1968 میں وادنگر میں روایتی انداز میں دونوں خاندانوں کی رضامندی سے ہوئی۔ اس وقت نریندر مودی 18 کے تھے[3] اور جیشودابن 16 کی تھی۔[2] شادی کے کچھ ہی وقت بعد نریندر مودی نے جشودابین کے ساتھ رہناچھوڑکر تین سال کی مسافرت اختیار کر لی، تاکہ وہ سنیاس پر عمل پیرا ہوں۔ اس کے بعد وہ اپنے چچا کے کاروبار میں شامل ہوئے اور پھر عوامی عہدہ اختیار کر گئے۔[4] مودی نے 2014 کی انتخابی مہم تک اس شادی کو سرکاری طور پر تسلیم نہیں کیا۔ جیشودابن آج بھی خود کو نریندر مودی کی بیودی سمجھتی ہیں۔ وہ اپنی تعلیم کی تکمیل کے بعد تدریسی پیشے سے وابستہ ہوئی تھیں۔[5]

پڑھانے سے وظیفہ لینے کے بعد وہ ایک سادہ عورت کی زندگی گزارتی ہیں۔[6] وزیر اعظم کی شریک حیا ت ہونے کی انہیں کچھ خصوصی حفاظتی انتظامات کے تحت رکھا گیا ہے جن کے احکام یا حقوق کا اُن کی جانب سے پوچھنے پر بھی علم نہیں دیا گیا ہے۔[7] بھارتی ذرائع ابلاغ میں اس شادی کی متنازع حالات کافی موضوع بحث بنے رہے تھے۔

ابتدائی زندگی، شادی اور عملی زندگی[ترمیم]

جیشودابن کی پیدائش 1952 میں ہوئی۔[2] اس کی ماں کا انتقال اس وقت ہوا جب وہ دو سال کی تھی[2]

نریندر مودی اور جیشودابن کی روایتی شادی وادنگر کی گھانچی ذات کے مطابق ہوئی۔[4] تقریبًا تین یا چار سال منگنی کے بندھن میں وہ بندھے رہے۔ تیرہ سال کی عمر کے قریب شادی ہوئی۔[4] شادی 1968 میں ہوئی۔[3] یہ شادی مودی کی مرضی کے خلاف ان پر تھوپی گئی تھی۔ اس لیے وہ کبھی بھی اپنی بیوی سے ایک عام میاں بیوی جیسے تعلقات نہیں رکھے اور طلاق نہیں لینے کے باوجود بیوی سے جدا رہنے لگے۔[8]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Express News Service (مئی 3, 2015)۔ "Jashodaben moves State Information Commission with fresh RTI"۔ The Indian Express۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 6 مئی 2015۔
  2. ^ ا ب پ ت Lakshmi Ajay (1 فروری 2014)۔ "'I like to read about him (Modi)... I know he will become PM'"۔ The Indian Express۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 26 ستمبر 2014۔
  3. ^ ا ب پ Nandini Oza؛ Kallol Bhattacherjee (22 اپریل 2014)۔ "THE FORGOTTEN HALF"۔ week.manoramaonline.com۔ Malayala Manorama۔ مورخہ 23 جون 2015 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 5 مئی 2015۔
  4. ^ ا ب پ Vinod K Jose (1 مارچ 2012)۔ "The Emperor Uncrowned"۔ The Caravan۔ اخذ شدہ بتاریخ 26 ستمبر 2014۔
  5. "Fantasies of Jashodaben: Leave Narendra Modi's wife alone"۔ اپریل 11, 2014۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 27 ستمبر 2014۔
  6. Annie Gowen (25 جنوری 2015)۔ "Abandoned as a child bride, wife of Narendra Modi hopes he calls"۔ واشنگٹن پوسٹ۔ واشنگٹن ڈی سی: WPC۔ ISSN 0190-8286۔ اخذ شدہ بتاریخ 20 مئی 2015۔
  7. Darshan Desai (3 مئی 2015)۔ "PM Modi's wife Jashodaben hopes to get 3rd time lucky with RTI"۔ انڈیا ٹوڈے۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 8 مئی 2015۔
  8. Revealed: Why Narendra Modi walked out of his marriage with Jashodaben