حمیدہ سلیم

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
حمیدہ سلیم
معلومات شخصیت
پیدائش 1922ء
بارہ بنکی
وفات 16 اگست 2015ء (93 سال)
جامعہ نگر، دہلی
قومیت بھارتی
پیشہ شاعرہ، تدریس: علی گڑھ مسلم یونیورسٹی، جامعہ ملیہ اسلامیہ، وغیرہ
کارہائے نمایاں شورش دوراں، ہم ساتھ تھے، پرچھائیوں کے اجالے، ہر دم زندگی

حمیدہ سلیم بھارت کی اردو مشہور شاعرات میں سے ایک تھیں۔ [1]


پیدائش[ترمیم]

حمیدہ کی پیدائش 1922ء میں بارہ بنکی کے زمین دار گھرانے میں ہوئی۔[1]

تدریس[ترمیم]

حمیدہ علی گڑھ مسلم یونیورسٹی، جامعہ ملیہ اسلامیہ، جیسے نامی گرامی تعلیمی اداروں میں پڑھا چکی ہیں۔ وہ خود علی گڑھ مسلم یونیورسٹی سے فارغ التحصیل پہلی پوسٹ گریجویٹ خاتون تھیں۔[1]


خاندان[ترمیم]

اہل خانہ میں شوہر ابو سلیم، بیٹی ڈاکٹر سُنبُل وارثی، بیٹے عرفان سلیم وغیرہ چند نام ہیں۔ شوہر ابو سلیم ریاستہائے متحدہ میں کام کیے۔ دیگر رشتہ داروں میں ان کے بھائی مجاز لکھنوی اور بہن صفیہ جاں نثار اختر کے نام لکھے جاتے ہیں۔ مشہور نغمہ نگار جاوید اختر ان کے بھانجے ہیں۔[1]

ذوق[ترمیم]

حمیدہ کو شاعری کا شوق تھا۔ اس وجہ سے شورش دوراں، ہم ساتھ تھے، پرچھائیوں کے اجالے، ہر دم زندگی کے عنوان شعری مجموعے شائع ہوئے۔[1]

انتقال[ترمیم]

16 اگست 2015ء کو وہ انتقال کر گئیں۔ اس وقت وہ تقریبً 93 سال کی تھیں۔

ذوق[ترمیم]

حمیدہ کو شاعری کا شوق تھا۔ اس وجہ سے شورش دوراں، ہم ساتھ تھے، پرچھائیوں کے اجالے، ہر دم زندگی کے عنوان شعری مجموعے شائع ہوئے۔[1]

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]