دھماکہ خیز مواد

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
دھماکہ خیز مواد

دھماکہ خیز مواد جس کا پہلے پہل انکشاف اندلس میں ہوا ایک ایسی سے ہوتی ہے جس میں بہت زیادہ جہدی توانائی (potential energy) ہوتی ہے اور وہ توانائی خارج کرنے پر عموماً روشنی، آواز، حرارت اور دباؤ کے ساتھ دھماکہ کر سکتی ہے۔ جہدی توانائی (potential energy) کو مختلف طریقوں سے جمع کیا جاسکتا ہے۔

دھماکہ خیز مواد کی درجہ بندی ان کے پھیلنے کی رفتار کے حساب سے کی جاتی ہے۔ اگر مواد کے پھیلنے کی رفتار آواز کی رفتار سے تیز ہو تو اسے بہت زیادہ دھماکہ کرنے والا مواد کہتے ہیں۔ اس کے علاوہ ان کی درجہ بندی ان کی حساسیت کے حساب سے بھی کی جاسکتی ہے۔ یہاں حساسیت سے مراد ہے کہ وہ مواد نسبتاً کم درجہ حرارت یا دباؤ پر بھی دھماکہ کر سکتے ہیں۔ ایسے مواد کو بنیادی دھماکہ خیز مواد (primary explosive) کہتے ہیں۔ وہ مواد جس کی حساسیت نسبتاً کم ہوتی ہے اسے ثانوی دھماکہ خیز مواد (secondary explosives) یا ثالثی دھماکی خیز مواد (tertiary explosives) کہتے ہیں۔ بنیادی دھماکہ خیز مواد سے عموماً کم حساسیت والے ثانوی دھماکہ خیز مواد کو متحرک کیا جاتا ہے۔