ریکھا راجو

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
ریکھا راجو
Rekha Raju DS 2.jpg
 

معلومات شخصیت
رہائش بنگلور  ویکی ڈیٹا پر (P551) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of India.svg بھارت  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
پیشہ کوریوگرافر  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

ریکھا راجو بنگلور، کرناٹک سے تعلق رکھنے والی ایک ہندوستانی کلاسیکل رقاصہ اور استانی ہیں۔ وہ بھرناتیم اور موہینی یاتم رقص میں مہارت رکھتیں ہیں۔ [1][2][3][4][5][6][7][8]

ابتدائی زندگی اور تعلیم[ترمیم]

ریختہ کیرالہ میں تھیٹر کے آرٹسٹ مسٹر ایم آر راجو اور مسز جیا لکشمی کے گھر پیدا ہوءیں اور بنگلور میں پرورش پائی۔ انھوں نے چار سال کی عمر میں کلاسیکل رقص سیکھنا شروع کیا۔متعدد گرووں کے تحت سخت تربیت حاصل کی، ان میں معروف گرو مسٹ کالامندلم اوشا داتر، گرو سری راجو داتر، گرو گوپیکا ورما اور گرو پروفیسر جناردھنن شامل ہیں[9]۔ انہوں نے اپنی کالج کی تعلیم کامرس کے شعبے میں حاصل کی، جب کہ اس نے ہیومن ریسورس اینڈ اکاؤنٹس میں ماسٹرز کیا۔[10] انہوں نے جرمنی کی ہیڈل برگ یونیورسٹی سے فائن آرٹس میں پی ایچ ڈی کی تعلیم مکمل کی۔ وہ بھارت ناٹیم میں ماسٹر کی ڈگری امتیازی اعزاز کے ساتھ ساتھ ودواتھ[مہارت] کی مالکہ ہیں۔[11][12]

کیریئر[ترمیم]

وہ چار سال کی عمر سے ہی ہندوستان اور بیرون ملک مختلف مراحل پر اپنے فن کا مظاہرہ کررہی ہیں اور کناڈا محکمہ ثقافت کے زیر اہتمام، یوورا سورابھا سمیت ہندوستان میں رقص کے بہت سارے قابل احترام اداروں کے لئے ایک گلوکار کی حیثیت سے کام کر چکی ہیں جن میں ہندوستانی ثقافتی تعلقات برائے کونسل میں پروگرام، انسٹی ٹیوٹ آف ورلڈ کلچر، دہلی انٹرنیشنل فیسٹیول، پونا ڈانس فیسٹیول، کاجوراہو ڈانس فیسٹیول، کونارک ڈانس فیسٹیول، پرانا قلعہ، چنئی موسمی رقص فیسٹیول، چدمبرم ڈانس فیسٹیول، آندھرا میوزک اور ڈانس فیسٹیول وغیرہ۔ انہیں انفرادی اور گروپ کوریوگرافی دونوں پر کافی داد ملی ہے۔ [13][14][15][16]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "Official Website". 27 اگست 2019 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 22 فروری 2021. 
  2. The New Indian Express News on 27 مئی 2013
  3. The Hindu News on 18 جون 2014
  4. Deccan Herald News on 1 ستمبر 2012
  5. "News British Biologicals" (PDF). 04 مارچ 2016 میں اصل (PDF) سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 22 فروری 2021. 
  6. The Hindu 26 ستمبر 2014
  7. The Hindu News on 17 Nune 2014
  8. "Karnataka News". 10 اگست 2014 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 22 فروری 2021. 
  9. "Website of Alliance Farncaise". 09 اگست 2014 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 22 فروری 2021. 
  10. The Hindu 26 ستمبر 2014
  11. "Website of Alliance Farncaise". 09 اگست 2014 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 22 فروری 2021. 
  12. "Official Website". 27 اگست 2019 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 22 فروری 2021. 
  13. The New Indian Express News on 27 مئی 2013
  14. "Website of Alliance Farncaise". 09 اگست 2014 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 22 فروری 2021. 
  15. "Official Website". 27 اگست 2019 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 22 فروری 2021. 
  16. Website of Cyber Kerala