سٹکسنیٹ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش

سٹکس نیٹ (stuxnet) اسرائیل اور امریکہ کا بنایا کمپیوٹر وورم ہے جو مائیکروسافٹ ونڈوز سے جُڑے سیمنز کے بنائے صنعتی تظبیط کاروں پر حملہ کرتا ہے۔ اس وورم کا بنیادی مقصد ایران کی جوہری تنصیبات میں سیمنز تظبیط استعمال کرنے والے یورینیئم افزودگی آلات کو ناکارہ بنانا تھا۔ سیمنز نے امریکی سائنسدانوں کو اپنے تظبیطی نظام کی خامیوں سے آگاہ کیا اور بھر پور عملی تعاون کیا جس کا فائدہ اٹھا کر سٹکسنیٹ وورم تیار کیا گیا۔ ایران کے یورینیئم افزودگی نابذہ پاکستان کے مشہور سائنسدان عبد القدیر خان کے طراح پر مبنی ہیں اور اسطرح کے نابذہ اسرائیلی اور امریکی سائنسدانوں کے پاس بھی موجود تھے۔ اسطرح اسرائلی سائنسدانوں نے حملے سے پہلے ان نابذہ پر تحربہ کر کے یقینی بنایا کہ وورم مطلوبہ کام انجام دے پائے گا۔[1] یہ وورم تنصیانت میں کام کرنے والے ملازمین کے ذاتی استعمال شدہ ونڈوز شمارندوں میں سے کائناتی سلسلی حافلہ پر منتقل ہو جاتا ہے اور اس وسیلہ سے تنصیبات کے اندر پہنچ جاتا ہے جہاں لاپرواہ ملازم انہیں صنعتی آلات سے جُڑے شمارندوں میں لگا کر انہیں عدوی کر دیتے ہیں۔ اطلاعات کے مطابق اس وورم نے کئی ایرانی آلات کو تباہ کر دیا۔ ایران کے علاوہ پاکستان، بھارت، اور انڈونیشیا کے صنعتی مراکز میں بھی اس وورم کے حملہ سے نقصان کی اطلاعات ملی ہیں۔ مبصرین کے مطابق اس حملہ کے بعد سیادی محاربہ ایک حقیقت بن گیا ہے۔

Overview of normal communications between Step 7 and a سیمنز PLC
Overview of Stuxnet hijacking communication between Step 7 software and a سیمنز PLC
سٹکسنٹ کا ہدف، سیمنز کا صنعتی تظبیط کار، جو یورینیم افزودگی مرکزگریز آلات کو قابو کرتا تھا۔

متاثرہ ممالک[ترمیم]

ملک متاثرہ کمپیوٹر
ایران 58.85%
انڈونیشیا 18.22%
بھارت 8.31%
آذربئجان 2.57%
امریکا 1.56%
پاکستان 1.28%
دیگر 9.2%

حوالہ جات[ترمیم]