شاہ سعود یونیورسٹی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
شاہ سعود یونیورسٹی
جامعة الملك سعود
KSU Logo COLORED PNGP-24.png
سابقہ نام
Riyadh University
شعار اقْرَأْ بِاسْمِ رَبِّكَ الَّذِي خَلَقَ
"Read! In the name of your Lord Who created" [Qur'an, C:96. V:1]
قسم Public
قیام 1957
انڈومنٹ US $2.7 billion
Badran A. O. Alomar
انتظامی عملہ
4,952
طلبہ 65,000 (as of 26 Mar 2015) [1]
مقام ریاض، سعودی عرب
24°43′19″N 46°37′37″E / 24.722°N 46.627°E / 24.722; 46.627متناسقات: 24°43′19″N 46°37′37″E / 24.722°N 46.627°E / 24.722; 46.627
کیمپس Urban, enclosed 2,224 acres (900 ha) (9 km²)
زبان English, عربی زبان
Newspaper رسالة الجامعة
ویب سائٹ www.ksu.edu.sa

شاہ سعود یونیورسٹی سعودی عرب کی پہلی سرکاری یونیورسٹی ہے جو سعودی عرب کے دار الحکومت ریاض میں واقع ہے۔ اسے 1957ء میں شاہ سعود بن عبد العزیز نے ریاض یونیورسٹی تعمیر کروایا تھا۔[2] اس کی تعمیر کا مقصد سعودی عرب میں ہنر مند افراد کی قلت پر قابو پانا تھا۔ 1982ء میں اس یونیورسٹی کا نام بدل کر شاہ سعود یونیورسٹی رکھ دیا گیا۔[3]

شاہ سعود یونیورسٹی میں 65,000 طلبہ و طالبات ہیں۔[4] طالبات کے نظم و ضبط کے لیے الگ پینل ہے، [5] جبکہ ان کی کارکردگی کی نگرانی ایک مرکزی بورڈ کے تحت حلقہ بند دورنما کے ذریعے کی جاتی ہے جس میں خواتین عملہ یا مرد عملہ کا کوئی رکن شامل ہوتا ہے۔[6] یونیورسٹی طبیعی علوم، سماجی علوم اور شعبہ جاتی تعلیم کے مضامین میں مفت تعلیم مہیا کرتی ہے۔ درجہ اول کی سند کے مخلتف شعبوں کا نصاب منتخب کردہ شعبہ کے حساب سے عربی اور انگریزی میں دستیاب ہے تاہم تقریباً بہت سے سائنسی مضامین عربی میں پڑھائے جاتے ہیں اور تمام عملہ عربی میں تدریس کرتا ہے۔ عرب کی یونیورسٹیوں میں سے اس یونیورسٹی کے علوم طب کے شعبہ جات ہہت اچھے سمجھے جاتے ہیں۔

تاریخ[ترمیم]

King Saud

شاہ سعود یونیورسٹی[ترمیم]

King Saud University entrance

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Ministry of Education - Higher Education, Deputy for Planning and Information Affairs, http://he.moe.gov.sa/en/studyinside/universitiesStatistics/Pages/default.aspx
  2. "Top Universities"۔ Top Universities۔ 2009-11-12۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 2010-11-16۔
  3. "Saudi Arabia - EDUCATION"۔ Countrystudies.us۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 2010-11-16۔
  4. "Facts and Statistics"۔ King Saud University۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 2012-09-01۔
  5. http://www.ksu.edu.sa/Students/Female%20Students/OlyashahCenter/Aboutcenter/Pages/Committees.aspx
  6. http://www.ksu.edu.sa/Students/Female%20Students/OlyashahCenter/Aboutcenter/Pages/default.aspx