عبداللہ عبداللہ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
عبداللہ عبداللہ
تفصیل=

چیف ایگزیکٹیو افغانستان
آغاز منصب
29 ستمبر 2014
صدر اشرف غنی احمد زئی
Fleche-defaut-droite-gris-32.png عبدالرحیم غفورزئی
  Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
وزیر خزانہ افغانستان
مدت منصب
2 Oاکتوبر 2001 – 20 اپریل 2005
صدر حامد کرزئی
Fleche-defaut-droite-gris-32.png وکیل احمد متوکل
رنگین ددفار سپنتا Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
قائد قومی اتحاد افغانستان
آغاز منصب
18 مارچ 2010
Fleche-defaut-droite-gris-32.png عہدہ قائم ہوا
  Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
معلومات شخصیت
پیدائش 5 ستمبر 1960 (59 سال)  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ پیدائش (P569) ویکی ڈیٹا پر
کابل  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام پیدائش (P19) ویکی ڈیٹا پر
شہریت Flag of Afghanistan (2002–2004).svg افغانستان  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں شہریت (P27) ویکی ڈیٹا پر
مذہب اسلام
جماعت قومی اتحاد افغانستان  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں سیاسی جماعت کی رکنیت (P102) ویکی ڈیٹا پر
اولاد 4
تعداد اولاد 4   خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تعداد اولاد (P1971) ویکی ڈیٹا پر
عملی زندگی
مادر علمی کابل طبی جامعہ
جامعہ کابل  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تعلیم از (P69) ویکی ڈیٹا پر
پیشہ سیاست دان،  ماہر عینیات،  سفارت کار  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں پیشہ (P106) ویکی ڈیٹا پر
ڈاکٹر عبداللہ عبداللہ

افغانستان کے پہلے چیف ایگزیکٹیو، سابق افغان وزیر خارجہ، صدارتی امیدوار صدارتی الیکشن 2009ء اور 2014ء۔ 1960ء کو کابل میں پیدا ہوئے۔ نسلاً تاجک ہیں مگر ان کی والدہ نے پهلی شوهر کے وفت کے بعد ایک قندهاری پشتون سے دوسری نکاح کرلی۔ زندگی کا ایک بڑا حصہ شمالی افغانستان کی وادی پجنشیر میں گزارا۔ انہوں نے ابتدائی اور اعلٰی تعلیم کابل سے ہی حاصل کی۔ وہ پیشے کے لحاظ سے ماہر چشم ہیں۔ وہ انیس سو پچاسی میں پاکستان آئے جہاں پر انہوں نے پشاور کے سید جمال الدین افغان ہسپتال میں ایک سال تک خدمات سر انجام دیں۔ اگلے سال وہ واپس افغانستان چلے گئے اور وادی پنجشیر میں احمد شاہ مسعود نے انہیں ایک عہدہ دیا۔ 1996ء میں کابل میں ب رہان الدین ربانی کی حکومت میں وزارت دفاع کے ترجمان جبکہ طالبان کے ہاتھوں ان کی حکومت کی معزولی کے بعد وزیر خارجہ کے طور پر کام کرتے رہے۔ دو ہزار ایک کے بعد افغانستان میں قائم ہونے والی عبوری حکومت میں حامد کرزئی کی کابینہ کے وزیر خارجہ رہے۔ انہیں فارسی، پشتو اور انگریزی زبانوں پر مکمل عبور حاصل ہے۔ 2009ء میں ہونے والے انتخابات میں وہ صدر حامد کرزئی کے سب مضبوط حریف کے طور پر سامنے آئے۔ اور انتخابات میں دوسری پوزیشن پر رہے۔

سیاسی زندگی[ترمیم]

انتخابات 2009[ترمیم]

انتخابات 2014[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]