عمر حسن احمد البشیر

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں
عمر حسن احمد البشیر
عمر البشير
Omar al-Bashir, 12th AU Summit, 090202-N-0506A-137.jpg
7th President of Sudan
دفتر سنبھالا
30 جون 1989
نائب صدر Zubair Mohamed Salih
Ali Osman Taha
John Garang
Salva Kiir Mayardit
Ali Osman Taha
Bakri Hassan Saleh
پیشرو Ahmed al-Mirghani
ذاتی تفصیلات
پیدائش عمر حسن احمد البشیر
1 جنوری 1944 (1944-01-01) ‏(73)
Hosh Bannaga, اینگلو مصری سوڈان
سیاسی جماعت نیشنل کانگریس
شریک حیات Fatima Khalid
Widad Babiker Omer
مادر علمی Egyptian Military Academy
مذہب اہل سنت
فوجی خدمات
Allegiance  سوڈان
 مصر
سروس/شاخ سوڈانی فوج
مصری فوج
سالہائے خدمات 1960–2013
عہدہ  سوڈان: فیلڈ مارشل
لڑائیاں/جنگیں First Sudanese Civil War
جنگ یوم کپور
Second Sudanese Civil War

عمرالبشیر (پیدائش، 1 جنوری 1944ء) جن کا پورا نام عمر حسن احمد البشیر ہے۔ سوڈان کی نیشنل کانگریس کے سربراہ اور سوڈان کے ساتويں صدر ہیں جو اس اپریل 2015ء میں دوسری بار اس عہدے کے لئے منتخب ہوئے ہیں۔1989ء میں سوڈانی فوج کے ایک بریگیڈیئر کے طور پر عمر البشیر جنوب میں باغیوں کے ساتھ مذاکرات شروع ہونے کے بعد وزیر اعظم صادق المہدی کی جمہوری طور پر منتخب حکومت کو معزول کرنے والے فوجی گروہ میں شریک تھے۔[1] اس کے بعد سے، انہیں تین بار منتخب صدر ہونے کے باوجود غبن کرنے کرنے کے الزام کا سامنا رہا ہے[2]۔مارچ 2009ء میں پہلی بار البشیر پر بین الاقوامی عدالت جرائم میں دارفر میں مبینہ طور پر بڑے پیمانے پر قتل کی ہدایات دینے، عصمت دری کرنے اور شہریوں کی املاک لوٹنے کا حکم دینے کا الزام لگایا گيا۔[3]

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "FACTBOX – Sudan's President Omar Hassan al-Bashir". Reuters. July 14, 2008. http://www.reuters.com/article/topNews/idUKL1435274220080714۔ اخذ کردہ بتاریخ July 16, 2008. 
  2. "BBC News - Dream election result for Sudan's President Bashir". اخذ کردہ بتاریخ 17 December 2014. 
  3. "Genocide in Darfur - United Human Rights Council". United Human Rights Council. اخذ کردہ بتاریخ 17 December 2014.