فرسٹ ایڈ کونسل آف انڈیا

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
فرسٹ ایڈ کونسل آف انڈیا
تاریخ تاسیس 13 جون 2017؛ 5 سال قبل (2017-06-13)
مقاصد بنیادی طبی تعلیم کا فروغ۔
سربراہ شباب عالم (13 جون 2017–)  ویکی ڈیٹا پر (P488) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
صدر شباب عالم
باضابطہ ویب سائٹ faci.ind.in

فرسٹ ایڈ کونسل آف انڈیا (انگریزی: First Aid Council of India) شاہدرہ میں واقع ایک غیر سرکاری تنظیم ہے۔ اس کو بھارتی ماہرِ تعلیم شباب عالم نے 2017ء میں بھارت میں ابتدائی طبی تعلیم کی ترویج کے لیے قائم کیا تھا۔یہ تنظیم کئی بھارتی جامعات سے کے ساتھ مل کرابتدائی طبی تعلیم میں سرٹیفکیٹ اور ڈپلوما کورسز کراتی ہے۔

تاریخ[ترمیم]

فرسٹ ایڈ کونسل آف انڈیا کو 2017 میں بھارتی ماہرِ تعلیم اور مصنف، شباب عالم، نے بھارت میں ابتدائی طبی تعلیم کی ترویج و اشاعت کے لیے قائم کیا۔[1][2] یہ کہا جاتا ہے کہ یہ تنظیم آتمنربھر بھارت سے متاثر ہو کر قائم ہوئی ہے؛ اس کا صدر دفتر شاہدرہ، دہلی میں واقع ہے۔[2]

نومبر 2020 میں، بھوپال میں واقع اٹل بہاری واجپائی ہندی ویشوودیالیہ نے فرسٹ ایڈ کونسل آف انڈیا کی تعلیمی امداد سے، ریاست ہائے مدھیہ پردیش میں ابتدائی طبی تعلیم کو فروغ دینے کے لیے کئی تعلیمی سینٹرز شروع کیے۔[3]دی فری پریس جرنل کی اکتوبر 2020 کی ایک رپورٹ کے مطابق اٹل بہاری یونیورسٹی مدھیہ پردیش کی ریاست میں فرسٹ ایڈ کی تعلیم کو فروغ دینے کے لیے تقریباً گیارہ تعلیمی سینٹرز قائم کرنے والی تھی۔[4] اکتوبر 2021 میں شری وینکاٹیشوارا یونیورسٹی فرسٹ ایڈ کونسل آف انڈیا کے ساتھ ابتدائی طبی تعلیم کے کورسز منعقد کرنے کے لیے معائدہ کیا۔[5] اس تنظیم کے بانی شباب عالم بطورِ صدر بھی خدمات انجام دے رہے ہیں۔[6]

پذیرائی[ترمیم]

دسمبر 2020 میں ہندوستان ٹائمز نے ڈاکٹروں اور ماہرین کو فرسٹ ایڈ کونسل آف انڈیا کے کورسز کی مذمت کرتے ہوئے رپورٹ کیا۔ انہوں نے اس پر دغا بازی کو فروغ دینے کا الزام لگایا۔[6] اٹل بہاری واجپائی ہندی یونیورسٹی کے وائس چانسلر ،رام دیو بھاردواج ، نے اس پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ"اگرچہ کئی ریاستی حکومتوں اور مرکزی حکومت نے ابتدائی طبی امداد کی تعلیم پر کورس شروع کرنے کے بارے میں تجاویز پر کئی بار بات چیت کی ہے، لیکن پورے ہندوستان میں کسی بھی ادارے نے اس طرح کے کورسز کو متعارف نہیں کرایا؛ اور یونیورسٹی پہلا ادارہ ہے جس نے اس سلسلے میں پہل کی۔"[6]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. سعدیہ، حمیرا (30 اکتوبر 2021). "ڈاکٹر شباب عالم اور ان کی خدمات پر ایک طائرانہ نظر". بصیرت آنلائن. اخذ شدہ بتاریخ 12مارچ 2022. 
  2. ^ ا ب ظہور، رخشندہ (26نومبر 2021). "Unemployment crisis and the First Aid Council of India". دی چناب ٹائمز. اخذ شدہ بتاریخ 12 مارچ 2022. 
  3. "ABVHU introduces 'first aid specialist' diploma, other first aid courses" [ABVHU نے 'فرسٹ ایڈ اسپیشلسٹ' ڈپلومہ، دیگر ابتدائی طبی امداد کے کورسز متعارف کرائے ہیں۔]. دی پیونییر. 6 نومبر2020. اخذ شدہ بتاریخ 10 مئی 2021. 
  4. "Madhya Pradesh: Atal Bihari Vajpayee Hindi University to open 11 study centres" [مدھیہ پردیش: اٹل بہاری واجپائی ہندی یونیورسٹی 11 اسٹڈی سینٹر کھولے گی۔]. دی فری پریس جرنل. 17 اکتوبر 2020. اخذ شدہ بتاریخ 10 مئِ 2021. 
  5. "Shri Venkateshwara University, Gajraula collaborates with the First Aid Council of India, to conduct first aid courses.". The News Caravan. 28اکتوبر 2021. اخذ شدہ بتاریخ 12 مارچ 2022. 
  6. ^ ا ب پ Tomar، Shruti (17 دسمبر 2020). "MP varsity faces flak for unique first-aid diploma". ہندوستان ٹائمز. اخذ شدہ بتاریخ 12 مارچ 2022. 

مزید مطالعہ[ترمیم]