محاصرہ مکہ (683ء)

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
محاصرہ مکہ
بسلسلہ دوسرا فتنہ
Kabaa.jpg
خانہ کعبہ، کو محاصرہ کےدوران میں آگ لگی اور غلاف کعبہ جل گیا۔
تاریخستمبر–نومبر 683ء
مقاممکہ
نتیجہ خلافت امویہ کی پس قدمی
محارب
خلافت امویہ مکہ والوں نے عبد اللہ ابن زبیر کی حمایت کی
کمانڈر اور رہنما
حصین بن نمیر اسکونی عبد اللہ ابن زبیر

محاصرہ مکہ کا واقعہ ستمبر–نومبر 683ء میں دوسری اسلامی خانہ جنگی کے دوران میں پیش آیا۔ شہر مکہ میں عبد اللہ ابن زبیر موجود تھے جنہوں نے یزید کی بیعت نہ کی تھی مگر انہوں نے ابھی اپنی خلافت کا اعلان بھی نہ کیا تھا، زبیر خلافت امویہ کے جانشین یزید بن معاویہ کے لیے بہت بڑا درد سر بنے ہوئے تھے۔ مدینہ منورہ، جو اسلام میں مکہ جیسا دوسرا مقدس شہر ہے، مکہ شہر سے قریب تھا، یزید کے خلاف ایک بغاوت شروع ہوئی، جسے کچلنے کے لیے اس نے عرب میں ایک فوج بھیجی۔ اموی فوج نے مدینہ والوں پر فتح حاصل کر لی، لیکن مکہ شہر پر ایک مہینے کا طویل محاصرہ کیا گیا، جس دوران میں خانہ کعبہ میں آگ لگ گئی۔ جب یزید کی اچانک موت کی خبر ملی تو، محاصرہ ختم ہو گیا۔

حوالہ جات[ترمیم]

مآخذ[ترمیم]

  • Hawting، G. R. (2000). The First Dynasty of Islam: The Umayyad Caliphate AD 661–750 (2nd Edition). London and New York: Routledge. ISBN 0-415-24072-7. 
  • Kennedy، Hugh N. (2004). The Prophet and the Age of the Caliphates: The Islamic Near East from the 6th to the 11th Century (ایڈیشن Second). Harlow, UK: Pearson Education Ltd. ISBN 0-582-40525-4. 
  • Lammens، H. (1987). "Yazīd b. Mu'āwiya". In Houtsma، Martijn Theodoor. E.J. Brill's first encyclopaedia of Islam, 1913–1936, Volume VIII: Ṭa'if–Zūrkhāna. Leiden: BRILL. صفحات 1162–1163. ISBN 90-04-08265-4. 
  • Wellhausen، Julius (1927). The Arab Kingdom and Its Fall. Calcutta: University of Calcutta. OCLC 752790641. 26 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. 
  • Wensinck، A. J.؛ Jomier، J. (1978). "Ka'ba". In van Donzel، E.؛ Lewis، B.؛ Pellat، Ch.؛ Bosworth، C. E. The Encyclopaedia of Islam, New Edition, Volume IV: Iran–Kha. Leiden: E. J. Brill. صفحات 317–322. ISBN 90-04-05745-5. 

متناسقات: 21°25′00″N 39°49′00″E / 21.4167°N 39.8167°E / 21.4167; 39.8167