معاونت:تعارف اسلوب نامہ/1

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

{{تعارف برائے|

Encyclopaedia Britannica 15 with 2002.jpg


[[رشید حسرتؔ ۱۶ جون ۱۹۶۲ کو مِٹھڑی (ضلع کچھّی) بلوچستان میں ایک مذہبی گھرانے میں پیدا ہوئے۔ آٹھویں جماعت میں تھے جب سے شعر کہنا شروع کر دیا تھا۔ ۱۹۸۱ میں ملازمت کے سلسلے میں کوئٹہ آئے تو باقاعدہ ان کا کلام مقامی اور قومی سطح کے اخبارات و رسائل میں شائع ہونے لگا۔ ریڈیو اور ٹی وی پروگرامز میں بھی حصّہ لیتے رہے۔ مقامی، صوبائی، قومی اور پاک و ہند سطح کے مشاعرے پڑھتے رہے۔ بلوچستان یونیورسٹی سے اردو ادب میں ایم اے کیا اور سیکریٹریٹ کی ملازمت ترک کر کے اردو ادب کے استاد کے طور فرائض انجام دینے لگے۔ بہت نرم دل، شریف النفس اور انتہائی سادہ مزاج انسان ہیں۔ آج کل ایک مقامی کالج میں ایسوسی ایٹ پروفیسر کے طور خدمات انجام دے رہے ہیں اور صدرِ شعبۂِ اردو ہیں]] ویکیپیڈیا کا اسلوب نامہ درحقیقت ایک مفصل ہدایت نامہ ہے جس میں ویکی مضامین کے اسلوب نگارش اور ان کی وضع قطع کو خوبصورت اور پرکشش بنانے کی مکمل رہنمائی درج ہے۔ ان ہدایات کی پیروی کرنے کے بعد ویکیپیڈیا پر آپ کے مضامین اور تحریریں واضح، صاف، پرکشش، متوازن، ہموار اور مستحکم نظر آئیں گے۔


اس کا سہل ترین طریقہ یہ ہے کہ آپ ویکیپیڈیا کے کسی بہترین مضمون کو تلاش کرکے اس کا اسلوب اور وضع و ہیئت کو بغور ملاحظہ فرمائیں اور بعد ازاں اپنے مضمون میں اس کی پیروی کی کوشش کریں۔ ساتھ ہی اسلوب نامہ کے مختلف گوشوں کی سیر کرکے اپنی مطلوبہ معلومات کو ذہن نشین کر لیں۔

یاد رکھیں کہ اسلوب نامہ میں درج ہدایات کو از اول تا آخر حفظ کرنا قطعاً ضروری نہیں۔ اس اسلوب نامہ کی ترتیب و پیشکش کا مقصود بس اتنا ہے کہ یہ ہدایات ان مقامات پر آپ کے لیے رہنما ثابت ہوں جہاں آپ معلومات کی پیشکش کے اسلوب کے تئیں غیر یقینی کیفیت سے دوچار ہو جائیں اور آپ یہ نہ سمجھ سکیں کہ مطلوبہ مواد کو کس طرز و ادا میں ویکیپیڈیا کی زینت بنایا جائے۔


واضح رہے کہ مضمون کے مندرجات اس کی خوب صورت وضع قطع سے زیادہ اہم ہیں۔ اگر آپ کا درج کردہ مواد ویکیپیڈیا لیے موزوں ہو تو اس کے رنگ ڈھنگ کو پر کشش بنانے میں دیگر تجربہ کار صارفین بھی حصہ لیتے ہیں اور یوں مشترکہ کاوش سے مضمون مزید نکھر جاتا ہے۔ زمرہ:[[

رشید حسرتؔ ۱۶ جون ۱۹۶۲ کو مِٹھڑی (ضلع کچھّی) بلوچستان میں ایک مذہبی گھرانے میں پیدا ہوئے۔ آٹھویں جماعت میں تھے جب سے شعر کہنا شروع کر دیا تھا۔ ۱۹۸۱ میں ملازمت کے سلسلے میں کوئٹہ آئے تو باقاعدہ ان کا کلام مقامی اور قومی سطح کے اخبارات و رسائل میں شائع ہونے لگا۔ ریڈیو اور ٹی وی پروگرامز میں بھی حصّہ لیتے رہے۔ مقامی، صوبائی، قومی اور پاک و ہند سطح کے مشاعرے پڑھتے رہے۔ بلوچستان یونیورسٹی سے اردو ادب میں ایم اے کیا اور سیکریٹریٹ کی ملازمت ترک کر کے اردو ادب کے استاد کے طور فرائض انجام دینے لگے۔ بہت نرم دل، شریف النفس اور انتہائی سادہ مزاج انسان ہیں۔ آج کل ایک مقامی کالج میں ایسوسی ایٹ پروفیسر کے طور خدمات انجام دے رہے ہیں اور صدرِ شعبۂِ اردو ہیں]] [[شہریت پاکستان پیدائش ۱۶ جون ۱۹۶۲ مِٹھڑی رہائش کوئٹہ

عملی زندگی مادر علمی بلوچستان یونیورسٹی تعلیم ایم اے اردو ملازمت محکمہ تعلیم پیشہ شاعری پیشہ ورانہ زبان اردو شعری مجموعے سُوکھے پتوں پہ قدم، اپسرا ادا کی بات (زیرِ طباعت)]

رشید حسرت.jpg