معجم الکبیر طبرانی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

المعجم الکبیر اہل سنت کے مشہور اور مستند عالم ابوالقاسماما م طبرانی کا مرتب کیا ہوا احادیث کا مجموعہ ہے۔ یہ کتاب 25 جلدوں میں 7800 صفحات پر مشتمل ہے۔ حافظ ابوالقاسم سلیمان بن احمد بن ایوب الطبرانی (360ھ)نے معجم کے نام سے تین کتابیں لکھیں (معجم کبیر،معجم اوسطمعجم صغیر) یہ ان کی مشہور و معروف تصانیف ہیں جو علم حدیث کی بلند پایہ کتابیں سمجھی جاتی ہیں، محدثین کی اصطلاح میں معجم ان کتابوں کو کہا جاتا ہے جن میں شیوخ کی ترتیب پر حدیثیں درج کی گئی ہوں۔

اس میں صحابہ کرام کی تر تیب پر ان کی مرویات شامل کی گئی ہیں۔ اور اس میں مشہور صحابی ابو ہریرہ (م57ھ) جن کی مرویات کی تعداد 5364ہے اس میں شامل نہیں ہیں کیونکہ وہ مصنف نے علاحدہ کتاب لکھی ہے، یہ کتاب 12جلدوں میں ہے اور اس میں 60ہزار احادیث جمع کی ہیں ۔[1] اس کتاب کو اکبر معاجم الدنیا کہا جاتا ہے یعنی دنیا کی سب سے بڑی معجم کا خطاب ملا ہے محدثین کے ہاں جب مطلق لفظ معجم بولا جاتا ہے تو یہ معجم مراد لی جاتی ہے اگر کوئی اور معجم مراد ہو تو ساتھ نام کی قید لگائی جاتی ہے۔[2]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ذہبی تذکرۃ الحفاظ۔ شاہ عبد اللہ العزیز محدث دہلوی بستان المحدثین
  2. الرسالہ المستطرفہ ،مؤلف: ابو عبد الله جعفر الكتانی، ناشر: دار البشائر الإسلامیہ