میک او ایس

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
میک او ایس
MacOS wordmark (2017).svg
ترقی دہندہایپل انکارپوریشن
پروگرام شدہ در
آپریٹنگ سسٹم خاندانیونکس، Macintosh
حالت کارجاری
سورس ماڈلملکیتی سافٹ ویئر (مع آزاد مصدر اجزا)
ابتدائی اشاعتمارچ 24، 2001؛ 19 سال قبل (2001-03-24)
مارکٹنگ ہدفنجی کمپیوٹنگ
دستیاب زبانیں[as of macOS Catalina]: عربی ، کاتالان ، کراتیائی ، چینی (ہانگ کانگ) ، چینی (آسان) ، چینی (روایتی) ، چیک ، ڈینش ، ڈچ ، انگریزی (آسٹریلیا) ، انگریزی (برطانیہ) ، انگریزی (ریاستہائے متحدہ) ، فینیش ، فرانسیسی (کینیڈا) ، فرانسیسی (فرانس) ، جرمن ، یونانی ، عبرانی ، ہندی ، ہنگیرین ، انڈونیشی ، اطالوی ، جاپانی ، کورین ، مالائی ، نارویجین ، پولش ، پرتگالی (برازیل) ، پرتگالی (پرتگال) ، رومانیہ ، روسی ، سلوواک ، ہسپانوی (لاطینی امریکہ)، ہسپانوی (اسپین)، سویڈش ، تھائی ، ترکی ، یوکرائنی ، ویتنامی
اسلوب تجدید
تقویت یافتہ پلیٹ فارمز
کرنل طرزHybrid (XNU)
متعین صارف انٹرفیسایکوا (گرافیکل یوزر انٹرفیس)
اجازت نامہکاروباری سافٹویئر، ملکیتی سافٹ ویئر
پیشروClassic Mac OS، NeXTSTEP
سرکاری ویب سائٹwww.apple.com/macos

میک او ایس (انگریزی: MacOS) ملکیتی سافٹ ویئر گرافیکل یوزر انٹرفیس کا ایک سلسلہ ہے جسے 2001ء سے لگاتار ایپل کمپنی لانچ کرتی آئی ہے۔ یہ میکنتاش کا بنیادی آپریٹنگ سسٹم ہے اور مائیکروسافٹ ونڈوز کے بعد ڈیسک ٹاپ، لیپ ٹاپ اور گھریلو کمپیوٹر میں دوسرا سب سے زیادہ استعمال کیا جانے والا آپریٹنگ سسٹم ہے۔[3][4]

میک او ایس میکنتاش اوپیریٹنگ سسٹمز کا دوسرا بڑا سلسلہ ہے۔ پہلا بڑا سلسلہ کلاسک میک او ایس کہلاتا ہے جسے 1984ء میں متعارف کرایا گیا تھا۔ اس کا حتمی نسخہ میک او ایس 9 1999ء میں جاری ہوا تھا۔ میک او ایس ایکس 10۔10 پہلا ڈیسک ٹاپ روزن تھا جو مارچ 2001ء میں جاری کیا گیا تھا اور اسی سال کے اختتام پر اس کا پہلا اپڈیٹ بنام 10.1 جاری ہوا۔ اس کے بعد ایپل نے ہر اپڈیٹ کو کسی گربہ کبری کے نام پر جاری کرنا شروع کیا جیسے او ایس ایکس 10۔8 لاین۔ او ایس ایکس 9۔10 میورکس کے بعد کیلیفورنا کے علاقوں کے نام پر رکھنا شروع کردیا۔[5] 2012ء میں ایپل نے او ایس کا نام مختصر کر کے “او ایس ایکس‘‘ کردیا اوو 2016ء میں “میک او ایس‘‘ کردیا۔ اور اس طرح آئی او ایس، واچ او ایس اور ٹی وی او ایس کی طرح میک او ایس ہو گیا۔ میک او ایس کا تازہ ترین ورزن اکتوبر 2019ء میں میک او ایس کیٹیلینا کے نام سے جاری ہوا۔

1999ء اور 2009ء کے درمیان ایپل نے میک او ایس ایکس سرور کے نام سے ایک نیا سلسلہ شروع کیا۔ اس کا ابتدائی ورزن میک او ایس ایکس سرور 0۔1 1999ء میں جاری کیا گیا جس کا یوزر انٹر فیس میک او ایس 5۔8 کی طرح تھا۔[6]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "What Is the I/O Kit?". IOKit Fundamentals. Apple considered several programming languages for the I/O Kit and chose a restricted subset of C++۔ 
  2. "What's New in Swift". Apple Developer (Video). جون 14, 2016. At 2:40. اگست 4, 2016 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ جون 16, 2016. 
  3. Desktop Operating System Market Share. Net Applications. doi:ڈی او ئي. http://www.netmarketshare.com/. 
  4. "Top 8 Operating Systems from Sept 2011 to Aug 2015". 26 مئی، 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. 
  5. Ha, Anthony (جون 10, 2013). "Apple Has A New, California-Based Naming Scheme For OS X, Starting With OS X Mavericks". TechCrunch. جولائی 9, 2017 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ جون 10, 2013. 
  6. "macOS Server". Mac App Store. اخذ شدہ بتاریخ November 6, 2018.