نسخہ ویٹیکن

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
نسخہ ویٹیکن کے کچھ صفحات، 2 تھسلنیکیوں کا اختتام اور عبرانیوں کا آغاز۔

نسخہ ویٹیکن چوتھی صدی مسیحی کا ہے اور نسخہ سینا سے زیادہ قدیم اور اس کی مانند زیادہ صحیح ہے۔ یہ نسخہ غالباً مصر میں لکھا گیا تھا اور اب روم میں ویٹیکن یعنی پوپ کے کُتب خانہ میں موجود ہے۔ اس میں تمام یونانی بائبل محفوظ ہے اور یونانی بائبل تمام نسخوں میں قدیم ترین اور معتبر ترین قلمی نسخہ ہے۔ اس کا متن وہی ہے جو نسخہ سینا کا ہے۔ یہی متن مصر میں چوتھی صدی کے اوائل میں مروج تھا۔ یہ دونوں نسخے (نسخہ ویٹی کن اور نسخہ سینا) نہ صرف اکثر آپس میں اتفاق کرتے ہیں بلکہ دونوں کی اصل ایک ہی ہے، اگرچہ وہ کسی ایک نسخے کی نقل نہیں ہیں۔ اس سے ثابت ہوتا ہے کہ ان نسخوں کا متن وہی ہے جسے الہامی مصنفین نے لکھا تھا۔[1]

اس نسخہ میں عہدِ عتیق کا قدیم ترین یونانی متن موجود ہے۔ 1890ء میں اس بیش بہا نسخہ کی عکسی تصاویر شائع کی گئیں۔ یہ قلمی نسخہ ہرن کے چمڑے پر لکھا ہوا ہے اور شکل چوکور اور ساڑھے دس انچ ہے۔ نہایت نفیس خط میں لکھا گیا ہے۔ ہر صفحے پر تین کالم اور تین قطاریں ہیں۔ اس نسخے میں عہدِ جدید کی تقریباً تمام کتابیں موجود ہیں، صرف ”عبرانیوں باب 9 آیت 14“ تا مقدس پولس کے پاسٹرل خطوط اور مکاشفات کی کتاب نہیں ہے۔[1]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب کتاب: صحتِ کتب مُقدسہ، مصنف: قسیس معظم آرچڈیکن علامہ برکت اللہ صاحب