پل آدم

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
پل آدم
پل آدم کا قدیم نقشہ

پل آدم (انگریزی: Adam's Bridge) (تامل: ஆதாம் பாலம் ātām pālam) جسے پل راما (Rama's Bridge) (تامل: இராமர் பாலம் Irāmar pālamسنسکرت: रामसेतु، rāmasetu[1] پایاب چونا پتھر کا ایک سلسلہ ہے جو بھارت کی ریاست تامل ناڈو کے جنوب مشرقی ساحل پر واقع جزیرہ پامبان جسے جزیرہ رامیشورم بھی کہا جاتا ہے سے سری لنکا کے شمال مغربی ساحل پر جزیرہ منار تک جاتا ہے۔ ارضیاتی ثبوت اس پل کو بھارت اور سری لنکا کے درمیان میں ایک سابق زمینی رابطہ تجویز کرتے ہیں۔[2]

پل 18 میل (30 کلومیٹر) طویل ہے [3] اور خلیج منار کو (جنوب مغرب) میں آبنائے پالک (شمال مشرق) سے جدا کرتا ہے۔

یہ حصہ جہازرانی کے قابل نہیں۔ کیونکہ کہیں بھی پانی کی گہرائی تین چار فٹ سے زیادہ نہیں۔ 1883ء میں یہاں بحری آمد و رفت کے لیے راستہ صاف کرنے کی کوشش کی گئی مگر کامیاب نہ ہو سکی۔ اسرائیلی و اسلامی روایات کے مطابق آدم نبی کو جب سری لنکا اتارا گیا تو وہ اسی راستے سے گزرے تھے۔ جبکہ ہندومت میں اس کو رام چندر کا بنایا ہوا پل کہتے ہیں۔ ہندوؤں کا عقیدہ ہے کہ رام اپنی اغوا شدہ بیوی کو بازیاب کرانے جب لنکا جا رہے تھے تب اپنی فوج کی سہولت کے لیے انھوں نے یہ پل بنایا تھا۔

تعمیراتی آرٹ ورک
رامائن سے تصویر 
رامائن: بندر لنکا کی طرف پل کی تعمیر کرتے دکھائی دیے ہیں 
رامائن سے تصویر 

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. also spelled Rama Setu، Ram Sethu، Ramasethu and variants.
  2. "Adam's bridge"۔ دائرۃ المعارف بریطانیکا۔ 2007۔ اخذ کردہ بتاریخ 2007-09-14 http://web.archive.org/web/20071012091357/http://www.britannica.com/eb/article-9003680۔ 
  3. Length taken from Google Earth