ڈیوڈ ہیڈلی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش

پاکستانی نژاد امریکی شہری۔ اصل نام داؤد گیلانی ۔ ممبئئ حملوں کی منصوبہ بندی میں ملوث ہونے کے الزام میں ان کو گرفتار کیا گیا۔ ریڈیو پاکستان کے ایک معروف ڈائریکٹر جنرل سید سلیم گیلانی مرحوم کے بیٹے ہیں۔سلیم گیلانی نے ان سے اس وقت ایک امریکی خاتون سے شادی کی تھی جب وہ وائس آف امریکہ ریڈیو کے لیے امریکہ میں کام کر رہے تھے۔ داؤد انیس سو ساٹھ میں واشنگٹن میں پیدا ہوئے تھے۔ اس کے کچھ دن بعد سلیم گیلانی اپنے خاندان سمیت پاکستان رہنے واپس آئے لیکن یہ شادی چلی نہیں اور ساٹھ کی ہی دہائی میں ان کی بیوی امریکی لوٹ گئیں اور طلاق ہوگئی۔اؤد گیلانی حسن ابدال کیڈٹ کالج میں پڑھے۔ سکول کے بعد وہ اپنی والدہ کے پاس امریکہ چلے گئے جس کے بعد ان کا پاکستان میں خاندان سے بہت کم تعلق رہا۔ترہ سالہ داؤد امریکہ میں صورتحال سے سمجھوتہ نہ کر سکے۔ وہ کالج کی تعلیم بھی پوری نہ کر سکے اور منشیات کے چکروں میں پڑ گئے۔ انیس سو اٹھانوے میں داؤد گیلانی کو منشیات سمگل کرنے کے کیس میں قصوروار پایا گیا اور تقریباً ڈیڑھ سال تک جیل میں رہے لیکن حکام سے تعاون کرنے کے باعث انہیں جیل کی طویل سزا نہیں کاٹنی پڑی اور وہ پھر امریکہ کی انسداد منشیات ادارے کے پاکستان میں خفیہ آپریشنز میں کام کرنے لگے۔سنہ دو ہزار چھ میں وہ امریکہ کے شہر شکاگو منتقل ہو ئے۔ سنہ دو ہزار پانچ یا چھ میں انہوں نے اپنا نام تبدیل کر لیا اور داؤد گیلانی ڈیوڈ کولمین ہیڈلی بن گئے۔ ہیڈلی ان کے ننھیال کا نام ہے۔