ہادیہ تاجک

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
ہادیہ تاجک
(ناروی بوکمول میں: Hadia Tajik ویکی ڈیٹا پر (P1559) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
تفصیل= ہادیہ تاجک

وزیر ثقافت
مدت منصب
21 ستمبر 2012 – 16 اکتوبر 2013
حکمران ہرالڈ پنجم
وزیر اعظم جینز سٹولٹنبرگ
Fleche-defaut-droite-gris-32.png انیکین ہوٹفیلڈ
  Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
آغاز منصب
14 ستمبر 2009
معلومات شخصیت
پیدائشی نام (ناروی بوکمول میں: Hadia Tajik ویکی ڈیٹا پر (P1477) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیدائش 18 جولا‎ئی 1983 (37 سال)[1][2]  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
رہائش اوسلو  ویکی ڈیٹا پر (P551) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of Norway.svg ناروے  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
قد 1.62 میٹر  ویکی ڈیٹا پر (P2048) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مذہب اسلام
عملی زندگی
مادر علمی جامعہ اوسلو[1]
کنگسٹن یونیورسٹی  ویکی ڈیٹا پر (P69) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
تعلیمی اسناد Master of Jurisprudence،doctor honoris causa  ویکی ڈیٹا پر (P69) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ سیاست دان[1]،  صحافی،  مفسرِ قانون[3]  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مادری زبان ناروی  ویکی ڈیٹا پر (P103) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان ناروی،  انگریزی،  نینوشک  ویکی ڈیٹا پر (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
ویب سائٹ
ویب سائٹ باضابطہ ویب سائٹ  ویکی ڈیٹا پر (P856) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
IMDb logo.svg
IMDB پر صفحہ  ویکی ڈیٹا پر (P345) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

ہادیہ تاجک (پیدائش 18 جولائی 1983ء) پاکستانی نژاد ناروے کی وکیل، صحافی اور سیاستدان ہیں۔ وہ لیبر پارٹی ناروے کی طرف سے رکن ایوان شوریٰ ہیں جو اوسلو کی نمائندگی کرتی ہیں۔[4] ااکیس ستمبر 2012ء کو وہ وزیر ثقافت بنا دی گئیں اور انہوں نے ناروے کی کم عمر ترین وزیر ہونے کا اعزاز حاصل کیا۔[5]

ابتدائی زندگی اور تعلیم[ترمیم]

ہادیہ تاجک 18 جولائی 1983ء کو روگالینڈ، ناروے میں ایک دکان دار محمد سرور تاجک اور صفیہ قزلباش کے گھر پیدا ہوئیں جو 1970ء کے اوائل میں ہجرت کر کے پاکستان سے ناروے چلے گئے۔ وہ حامدہ سٹیوانگر سے صحافت میں فارغ التحصیل ہیں اور 2012ء میں جامعہ اوسلو سے قانون میں ماہر الفنیات کی سند حاصل کی[6]

وزیر ثقافت[ترمیم]

ستمبر 2012 میں وزیر اعظم ناروے جینز سٹولٹنبرگ نے انہیں وزیر ثقافت بنا دیا ان سے پہلے اس عہدے پر اینیکین ہوٹفیلٹ تعینات تھے۔ وہ اس وقت ناروے کی تاریخ کی سب سے کم عمر ترین (29 برس کی عمر میں) وزیر ہیں اور ناروے کابینہ کی پہلی مسلم رکن ہیں۔[7][8]

کتابیات[ترمیم]

  • 2001ء تاجک، ہادیہ: سوارٹ پا وٹ، ٹائیڈن نارسک فورلاگ
  • 2009ء گیسکے، ٹرونڈ، تاجک، ہادیہ: "ویم سناکر برائے باب کارے؟" i Mangfold eller enfold, Aschehoug

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب پ https://www.stortinget.no/no/Representanter-og-komiteer/Representantene/Representantfordeling/Representant/?perid=HTA&tab=Biography
  2. Store norske leksikon ID: https://snl.no/Hadia_Tajik — بنام: Hadia Tajik — عنوان : Store norske leksikon
  3. https://www.advokatbladet.no/hadia-tajik--offentlig-salaersats-gar-utover-rettssikkerheten/113714
  4. چھٹی پارلیمانی نشست
  5. Buer، Kathleen (21 ستمبر 2012). "ہادیہ تاجک (29) blir ny Kulturminister". Abcnyheter.no (بزبان النرويجية). 07 جنوری 2019 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 21 ستمبر 2012. 
  6. Barstad، Lars Henie. "Tajik, Hadia". Representantene (بزبان النرويجية). Stortinget. 07 جنوری 2019 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 21 ستمبر 2012. 
  7. "Radical Changes in Norway's New Cabinet". 07 جنوری 2019 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 25 ستمبر 2012. 
  8. "Dette er den nye kulturministeren – Hadia Tajik". 07 جنوری 2019 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 21 ستمبر 2012. 

بیرونی روابط[ترمیم]