برقہ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
برقہ
Cyrenaica
Barqa / Barka

برقة
—  لیبیا کا نیم خود مختار علاقہ[1]  —
برقہ 1927 تا 1963
اعلان 6 مارچ 2012
دارالحکومت بنغازی
حکومت
 - حکمران ادارہ برقہ عبوری کونسل[2] (اعلان)
جنرل نیشنل کانگریس (اصل اتھارٹی)
رقبہ[3]
 - کُل 855,370 کلومیٹر2 (330,260.2 میل2)
آبادی (2006)[4]
 - کُل 1,613,749
 کثافتِ آبادی 1.9/کلومیٹر2 (4.9/میل2)
رومی کھنڈرات، برقہ
امارت برقہ کا پرچم

برقہ (انگریزی: Cyrenaica) شمال مشرقی لیبیا کا ایک جزیرہ نما ہے۔ اس کے جنوب میں مشرقی لیبیا کا وسیع و عریض صحرائے اعظم ہے۔ اس جزیرہ نما میں جبل اخضر ہے جس کی بلند ترین چوٹی 868 میٹر اونچی ہے۔ برقہ کے سامنے بنغازی کا ساحلی میدان ہے۔ یونانی دور میں یہاں پنٹاپولس(عربی: انطابلس) یعنی پانچ بستیاں ، سرنہ، اپولونیا، برقہ، برنیک اور توکرہ، بسائی گئیں۔

مسلمانوں نے اس علاقے کو 641ء میں اپنی قلمرو میں شامل کیا اور 17 ویں صدی کے اوائل میں یہ عثمانی سلطنت کا حصہ بنا۔

1911ء میں یہاں اطالوی حملہ آور ہوئے تاہم وہ بمشکل 1931ء میں برقہ پر قبضہ کر سکے۔ اطالوی دسمبر 1942ء تک برقہ پر قابض رہے۔

1934 سے 1963 تک برقہ مغرب میں فزان اور شمال مغرب میں طرابلس کے ساتھ اطالوی لیبیا اور مملکت لیبیا کی تین انتظامی اکائیوں میں سے ایک تھا۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ "Eastern Libyan leaders declare semi-autonomy". CNN. 7 March 2012. http://edition.cnn.com/2012/03/06/world/africa/libya-benghazi/index.html.
  2. ^ The battle for federalism in Libya's east Al Jazeera, 3 July 2012
  3. ^ Abdel Aziz Tarih Sharaf, “Jughrafia Libia”, Munsha’at al Ma’arif, Alexandria, 2nd ed., 1971, pp.232-233.
  4. ^ 2006 census, based on the sum of population of districts Al Wahat, Kufra, Benghazi, Al Marj, Jebel Akhdar, Derna, Al Butnan