ابو الخیر مودودی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
مولانا ابو الخیر مودودی
پیدائش25 دسمبر 1899(1899-12-25)ء
وفات28 اگست 1979(1979-80-28) (عمر  79 سال)

لاہور، پاکستان
آخری آرام گاہگارڈن ٹاؤن قبرستان، لاہور
پیشہعربی زبان و ادب کے عالم، مصنف، مترجم
زباناردو، عربی
قومیتFlag of پاکستانپاکستانی
نسلمہاجر
شہریتFlag of پاکستانپاکستانی
اصنافتاریخ، اسلامیات، ترجمہ
نمایاں کامفتوح البلدان (ترجمہ)
کتاب الخراج و صنعۃ الکتابت

مولانا سید ابو الخیر مودودی (پیدائش: 25 دسمبر، 1899ء - وفات: 28 اگست، 1979ء) عربی زبان و ادب کے نامور عالم، مصنف اور مترجم تھے۔ وہ مشہور عالم دین مولانا سید ابو الاعلیٰ مودودی کے بڑے بھائی تھے۔

حالات زندگی[ترمیم]

مولانا ابو الخیر مودودی 25 دسمبر، 1899ء کو پیدا ہوئے تھے[1][2]۔ وہ عثمانیہ یونیورسٹی حیدرآباد دکن کت دار الترجمہ سے وابستہ رہے اور تقسیم ہند کے بعد لاہور میں اقامت پزیر ہوئے۔ ان کے تراجم میں علامہ بلاذری کی فتوح البلدان اور ابو الفرخ قدامہ بن جعفر کی کتاب الخراج و صنعۃ الکتابت کے نام شامل ہیں۔ اس کے علاوہ انہوں نے مطالع المقدود من مطالع الدہور کے نام سے بھی ایک کتاب تحریر کی تھی۔[2]

مولانا ابو الخیر مودودی نامور عالم دین اور جماعت اسلامی کے بانی مولانا سید ابو الاعلیٰ مودودی کے بڑے بھائی تھے۔[2]

تصانیف[ترمیم]

  • فتوح البلدان (بلاذری کی کتاب کا ترجمہ)
  • کتاب الخراج و صنعۃ الکتابت (ابو الفرج قدامہ بن جعفر کی کتاب کا ترجمہ)
  • مطالع المقدود من مطالع الدہور

وفات[ترمیم]

مولانا ابو الخیر مودودی 28 اگست، 1979ء کو لاہور، پاکستان میں وفات پاگئے۔ وہ لاہور میں گارڈن ٹاؤن کے قبرستان میں آسودۂ خاک ہیں۔[1][2]

حوالہ جات[ترمیم]