امیلیا ایرہارٹ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں
امیلیا ایرہارٹ
Amelia Earhart
امیلیا ایرہارٹ، 1935
امیلیا ایرہارٹ، 1935

معلومات شخصیت
پیدائشی نام انگریزی: Amelia Mary Earhart  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں پیدائشی نام (P1477) ویکی ڈیٹا پر
پیدائش
ایچیسن، کنساس  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام پیدائش (P19) ویکی ڈیٹا پر
وفات بحر الکاہل  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام وفات (P20) ویکی ڈیٹا پر
تاريخ غائب جولائی 2, 1937 (عمر 39)
مقامِ غائب جزیرہ ہاولینڈ کو جاتے ہوئے بحر الکاہل
غائب کیفیت اعلان مردہ غائبانہ
جنوری 5، 1939(1939-10-50) (عمر  41 سال)
قومیت امریکی
شوہر جارج پی پٹنم
عملی زندگی
پیشہ پائلٹ  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں پیشہ (P106) ویکی ڈیٹا پر
تصنیفی زبان انگریزی[1]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں بولی، لکھی اور دستخط کی گئیں زبانیں (P1412) ویکی ڈیٹا پر
دستخط
امیلیا ایرہارٹ
ویب سائٹ
ویب سائٹ ameliaearhart.com
IMDB IMDB پر صفحات  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں آئی ایم ڈی  بی - آئی ڈی (P345) ویکی ڈیٹا پر

امیلیا میری ایرہارٹ (Amelia Mary Earhart) ایک امریکی ہواباز خاتون تھی۔

بچپن[ترمیم]

امیلیا میری ایرہارٹ کنساس میں اپنے دادا کے گھر کے میں 1897ء میں پیدا ہوئی۔ انکے والدین اتنے اامیر نہ تھے لیکن ان کے دادا کافی صاحب ثروت تھے اسلئے انکے دادا نے انھیں ایک اچھے اسکول میں بھیجا ۔

وجہ شہرت[ترمیم]

20 سال کی عمر میں امیلا نے نرسینگ کرنے کا فیصلہ کیا اور دوسری جنگ عظیم میں ایک ہسپتال میں میں کام کیا۔ جب وہ 23 سال کی ہوئی تو ایک دن وہ ایک ہوائی کرتب دیکھنے گئی اور جہاز میں سفر بھی کیا ۔ اس وقت امیلا نے فیصلہ کیا کہ وہ پائلٹ بننے گی۔ 1920ء تک لوگ جہاز اڑانے کو ایک خطرناک کام جانتے تھے اور لوگ سوچتے تھے کہ یہ ایک عورت کی بس کی بات نہیں۔ لیکن امیلا نے ہوا بازی کی تربیت حاصل کرنی شروع کی صرف ایک سال بعد امیلا نے اپنا پہلا ریکارڈ بنایا وہ 14000 فٹ کی بلندی تک اڑی۔ امیلا نے 34 سال کی عمر میں شادی کی لیکن لاولد رہی ۔اگلے سال وہ پہلی خاتون ہوا باز بنی ( اور دو سری انسان) جس نے بحر الکاہل کو اکیلے پار کیا ۔اسکے بعد وہ کافی مشہور ہوئی اس شہرت نے اسے دنیا بھر میں لوگوں کی توجہ کا مرکز بنا دیا۔اور 1935ء میں امیلا نے بحر اوقیانوس کو سب سے پہلے پار کرنے کا اعزاز حاصل کرلیا۔

آخری سفر[ترمیم]

جب انکی عمر 40 سال کے قریب ہوئی تو امیلا نے چاہا کہ وہ پہلی عورت بنے جو پوری دنیا کا چکر لگائےانھوں نے 29000 میل کا سفر میامی سے 1 جون 1937ء کو شروع کیا۔ 2 جولائی کو جب وہ اپنے سفر کو ختم کرنے والی تھی تو انکا طیارہ جزیرہ ہاولینڈ کے قریب بحر کاہل میں غائب ہوگیا۔

  1. http://data.bnf.fr/ark:/12148/cb158042582 — اخذ شدہ بتاریخ: 10 اکتوبر 2015 — اجازت نامہ: آزاد اجازت نامہ