اینیڈ بیکویل

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
اینیڈ بیکویل
Enid backwell.jpg
ذاتی معلومات
مکمل ناماینیڈ بیکویل
پیدائش16 دسمبر 1940ء (عمر 81 سال)
نیوز سٹیڈ گاؤں, ناٹنگھمشائر, انگلینڈ
بلے بازیدائیں ہاتھ کی بلے باز
گیند بازیبائیں ہاتھ کا اسپن گیند باز
حیثیتآل راؤنڈر
بین الاقوامی کرکٹ
قومی ٹیم
پہلا ٹیسٹ (کیپ 70)27 دسمبر 1968  بمقابلہ  آسٹریلیا
آخری ٹیسٹ1 جولائی 1979  بمقابلہ  ویسٹ انڈیز
پہلا ایک روزہ (کیپ 1)23 جون 1973  بمقابلہ  خواتین کی بین الاقوامی کرکٹ ٹیم
آخری ایک روزہ7 فروری 1982  بمقابلہ  آسٹریلیا
ملکی کرکٹ
عرصہٹیمیں
1963–1993ایسٹ مڈلینڈز
1994–1999سرے
کیریئر اعداد و شمار
مقابلہ ٹیسٹ ایک روزہ فرسٹ کلاس لسٹ اے
میچ 12 23 39 96
رنز بنائے 1,078 500 2,281 2,457
بیٹنگ اوسط 59.88 35.71 42.24 36.67
100s/50s 4/7 2/2 5/16 4/10
ٹاپ اسکور 124 118 124 118
گیندیں کرائیں 2,698 1,313 6,939 5,139
وکٹ 50 25 157 130
بالنگ اوسط 16.62 21.12 14.38 15.59
اننگز میں 5 وکٹ 3 0 12 2
میچ میں 10 وکٹ 1 0 4 0
بہترین بولنگ 7/61 3/13 8/16 5/20
کیچ/سٹمپ 9/– 7/– 23/– 28/–
ماخذ: CricketArchive، 3 مارچ 2021ء

اینیڈ بیک ویل (پیدائش: 16 دسمبر 1940ء) انگلستان کی ایک خاتون کرکٹ کھلاڑی ہے جو 1968ء سے 1979ء کے درمیان 12 ٹیسٹ اور 23 ایک روزہ بین الاقوامی میچوں میں کھیلی۔ ایک دائیں ہاتھ کی بلے باز اور سست بائیں ہاتھ کی آرتھوڈوکس باؤلر، اپنے اعداد و شمار پر وہ انگلش خواتین کے کھیل نے تیار کردہ بہترین آل راؤنڈر کے طور پر شمار ہونے کا مضبوط دعویٰ کرتی ہیں۔ [1] ٹیسٹ میں اس نے 59.88 کی اوسط سے 1,078 رنز بنائے، 4 سنچریوں کے ساتھ ساتھ 16.62 کی اوسط سے 50 وکٹیں بھی لیں۔ جو اس کا آخری ٹیسٹ ثابت ہوا، اس میں اس نے 68 اور 112 * (انگلینڈ کے مجموعی 164 میں سے) رن بنائے اور ویسٹ انڈیز کے خلاف ایجبسٹن میں 75 رنز دے کر 10 (بشمول 7-61 کی دوسری اننگز میں کیرئیر کی بہترین شخصیات) حاصل کیں۔ 1979ء [2] [3] اس کی آخری ایک روزہ میچ میں شرکت 1982ء خواتین کے کرکٹ ورلڈ کپ کے فائنل میں تھی۔ [4] اس نے لین تھامس کے ساتھ مل کر ویمنز کرکٹ ورلڈ کپ (246) کی تاریخ میں سب سے زیادہ اوپننگ رنز کی شراکت داری کا ریکارڈ قائم کیا۔ 2014ء میں وزڈن کرکٹرز المناک نے انہیں اب تک کی پانچ عظیم ترین خواتین کھلاڑیوں میں سے ایک کے طور پر منتخب کیا۔ [5]

ابتدائی زندگی[ترمیم]

بیک ویل کی پیدائش نیوز سٹیڈ ولیج ، ناٹنگھم شائر میں ہوئی تھی۔ انہیں بچپن سے ہی کرکٹ کھیلنے کی ترغیب دی گئی تھی۔ اس کی تعلیم نیوزٹیڈ کے پرائمری اسکول اور برنکلف کاؤنٹی گرامر اسکول، ناٹنگھم میں ہوئی۔ ایک مقامی کلب، نٹسکیوسل کے لیے کھیلنے کے بعد، اس نے 14 سال کی عمر میں ناٹنگھم شائر کاؤنٹی خواتین کی ٹیم کے لیے کھیلنا شروع کیا۔[حوالہ درکار] میں اپنی بیٹنگ پر توجہ دی لیکن اسے بائیں ہاتھ کی سست باؤلنگ تیار کرنے کی ترغیب دی گئی، جسے اس نے ٹونی لاک پر بنایا تھا۔ [6] اس نے ڈارٹ فورڈ کالج آف فزیکل ایجوکیشن میں تعلیم حاصل کی، 1959ء میں گریجویشن کیا۔ اس نے رولز رائس کے ساتھ الیکٹریکل انجینئر کولن بیک ویل سے شادی کی۔ ان کی بیٹی 1966ء میں پیدا ہوئی۔

کرکٹ کیریئر[ترمیم]

بیک ویل کو 1963ء میں آسٹریلیا کے ٹیسٹ دورے کے لیے سلیکشن کے لیے سمجھا گیا تھا۔ وہ حاملہ تھیں اور اس لیے 1966ء میں انگلینڈ میں نیوزی لینڈ کے خلاف ہوم ٹیسٹ سے محروم تھیں۔ وہ آسٹریلیا کے خلاف تینوں ٹیسٹ اور نیوزی لینڈ کے خلاف تینوں ٹیسٹ کھیل کر 1968-69ء کے دورے میں شامل ہوئیں۔ اس نے 1968ء میں آسٹریلیا کے خلاف اپنے پہلے ٹیسٹ میں بیٹنگ کا آغاز کیا، اور ڈیبیو پر سنچری بنائی، اور 1969ء میں نیوزی لینڈ کے خلاف پہلے اور دوسرے ٹیسٹ میں بیٹنگ کا آغاز کرتے ہوئے سنچریاں بھی بنائیں۔ چھوٹی لیکن تیز اور ایتھلیٹک، اچھے فٹ ورک کے ساتھ، اس دورے پر اس نے 29 اننگز میں 39.60 کی بیٹنگ اوسط حاصل کی، اور 9.70 کی باؤلنگ اوسط سے 118 وکٹیں حاصل کیں۔ 1973ء میں خواتین کے عالمی کپ کے پہلے مقابلے میں جسے انگلینڈ نے جیتا تھا، اس نے آسٹریلیا کے خلاف فائنل میچ میں 118 رنز بنائے اور 12 اوورز میں 2/28 حاصل کیے۔ [7] اس نے 41 سال کی عمر میں 1982ء کے خواتین کرکٹ ورلڈ کپ میں بھی کھیلا، وانگنوئی میں ہندوستان کے خلاف 13 رن پر 3 اور پھر ویلنگٹن میں انٹرنیشنل الیون کے خلاف 29 رن پر تین وکٹیں لیں۔ [1] اس نے 1973 ءمیں آسٹریلیا کے خلاف گھر پر تین ٹیسٹ اور 1979ء میں ویسٹ انڈیز کے خلاف تین ہوم ٹیسٹ بھی کھیلے۔ ایجبسٹن میں 1979ء میں اس نے پہلی اننگز میں 68 رنز بنائے، دوسری اننگز میں ناٹ آؤٹ 112 رنز بنانے کے لیے اپنا بلے بازی کی، اور میچ میں (3-14 اور 7-61) میں 10 وکٹیں لیں۔ [2]

ٹیسٹ سنچریاں[ترمیم]

اینیڈ بیکویل کی ٹیسٹ سنچریاں[8]
# رنز میچ مخالف ٹیم شہر ملک مقام سال
1 101* 1  آسٹریلیا آسٹریلیا کا پرچم ایڈیلیڈ، آسٹریلیا بارٹن اوول 1968[9]
2 124 4  نیوزی لینڈ نیوزی لینڈ کا پرچم ویلنگٹن، نیوزی لینڈ بیسن ریزرو 1969[10]
3 114 5  نیوزی لینڈ نیوزی لینڈ کا پرچم کرائسٹ چرچ، نیوزی لینڈ ہاگلے اوول 1969[11]
4 112* 12  ویسٹ انڈیز انگلستان کا پرچم برمنگھم، انگلینڈ ایجبسٹن 1979[12]

ایک روزہ بین الاقوامی سنچریاں[ترمیم]

اینڈ بیکویل کی ایک روزہ بین الاقوامی سنچریاں[13]
# رنز میچ مخالف ٹیم شہر ملک مقام سال
1 101* 1  انٹرنیشنل الیون انگلستان کا پرچم ہوو، انگلینڈ کاؤنٹی گراؤنڈ 1973[14]
2 118 6  آسٹریلیا انگلستان کا پرچم برمنگھم، انگلینڈ ایجبسٹن 1973[15]

بعد کی زندگی[ترمیم]

وہ ایسٹ مڈلینڈز اور بعد میں سرے کے لیے 50ء کی دہائی تک کھیلتی رہیں۔ وہ ای سی بی کی اہل کوچ ہیں۔ بیک ویل کو 2012ء میں آئی سی سی کرکٹ ہال آف فیم میں شامل کیا گیا، اس طرح پہچانی جانے والی تیسری خاتون کرکٹر بنیں ( ریچل ہیہو فلنٹ اور بیلنڈا کلارک کے بعد)۔ [16] انہیں 2019ء کے نئے سال کے اعزاز میں MBE سے نوازا گیا تھا۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب Dual table toppers
  2. ^ ا ب Scorecard, England Women v West Indies Women, Edgbaston, July 1979
  3. Wisden Cricketers' Almanack, 2019 edition, "Notes by the Editor: The mother of farewells", p. 24.
  4. "Statsguru: Women's One-Day Internationals, Batting records". ESPN Cricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 27 اپریل 2021. 
  5. Wisden Cricketers' Almanack, 2014 edition, "The Greats of the Women's Game: A formidable quintet", by Tanya Aldred, p29.
  6. Enid Bakewell - champion woman cricketer - article from 1970 edition of Wisden Cricketers' Almanack
  7. Scorecard of 1973 World Cup Final
  8. "All-round records | Women's Test matches | Cricinfo Statsguru | ESPNcricinfo.com – Enid Bakewell". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 02 دسمبر 2021. 
  9. "Full Scorecard of ENG Women vs AUS Women 1st Test 1968/69 - Score Report | ESPNcricinfo.com". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 02 دسمبر 2021. 
  10. "Full Scorecard of NZ Women vs ENG Women 1st Test 1968/69 - Score Report | ESPNcricinfo.com". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 02 دسمبر 2021. 
  11. "Full Scorecard of NZ Women vs ENG Women 2nd Test 1968/69 - Score Report | ESPNcricinfo.com". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 02 دسمبر 2021. 
  12. "Full Scorecard of ENG Women vs WI Women 3rd Test 1979 - Score Report | ESPNcricinfo.com". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 02 دسمبر 2021. 
  13. "All-round records | Women's One-Day Internationals | Cricinfo Statsguru | ESPNcricinfo.com – Enid Bakewell". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 02 دسمبر 2021. 
  14. "Full Scorecard of ENG Women vs Int XI Women 3rd Match 1973 - Score Report | ESPNcricinfo.com". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 02 دسمبر 2021. 
  15. "Full Scorecard of ENG Women vs AUS Women 21st Match 1973 - Score Report | ESPNcricinfo.com". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 02 دسمبر 2021. 
  16. Fernando، Andrew (14 September 2012). "Lara, Enid Bakewell inducted into Hall of Fame". ای ایس پی این کرک انفو. ESPN Inc. اخذ شدہ بتاریخ 01 جنوری 2013.